The news is by your side.

Advertisement

حدیبیہ پیپرملز ریفرنس دائر کرنے میں تاخیر، شیخ رشید نے سپریم کورٹ سے رجوع کرلیا

اسلام آباد : عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے حدیبیہ پیپرملز کیس میں نیب کی اپیل دائر نہ کرنے کے خلاف درخواست دائر کردی، نیب نے سپریم کورٹ کو سات روزمیں اپیل دائر کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی۔

تفصیلات کے مطابق عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے حدیبیہ پیپرملز ریفرنس دائر کرنے میں تاخیر پر سپریم کورٹ میں درخواست دائر کردی۔

درخواست میں کہا گیا ہے نیب نے اکیس جولائی کو سات دن میں اپیل دائر کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی، جسے عدالت نے فیصلے کا حصہ بنایا تھا، 7 دن بعد چیئرمین نیب کویقین دہانی سے متعلق نوٹس بجھوایا ، چئیرمین نیب نے تاحال نوٹس کا جواب نہیں دیا۔

دائر درخواست میں کہا گیا ہے کہ میڈیارپورٹس کے مطابق نیب نے اپیل دائر نہ کرنے کا فیصلہ کیا، چئیرمین نیب اورپراسیکیوٹرجنرل غیرجانبداری کے پابند ہیں، جے آئی ٹی نے حدیبیہ ملزکیس کی تفصیلی تحقیقات کیں، نوازشریف اور اسحاق ڈار منی لانڈرنگ میں ملوث پائے گئے جبکہ شریف خاندان کےدیگر افرادنے بھی منی لانڈرنگ سےفائدہ اٹھایا۔

شیخ رشید کا درخواست میں کہنا ہے کہ جے آئی ٹی نے ملزمان کے خلاف ناقابل تردید شواہد پیش کیے، رپورٹ کےمطابق منی لانڈرنگ ستمبر1991سے ہی شروع ہوگئی تھی ، 2238 ملین ڈالر سعید احمد اور مختار حسین کے اکاونٹ میں منتقل کیے گئے، 1993 سے 95کے دوران مزید 35لاکھ ڈالر لندن منتقل کیے گئے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ چئیرمین نیب اور پراسیکیوٹر جنرل ملزمان کے زیراثر ہیں ، اپیل دائر نہ کرکےعدالتی فیصلے پرعمل میں رکاوٹیں پیداکی جارہی ہیں ، نوٹس نہ لیاگیاتومنی لانڈرنگ سے متعلق سازش کامیاب ہوجائے گی۔

درخواست گزار نے استدعا کی ہے کہ عدالت نے28 جولائی کوعمل درآمد کے لیے نگران جج مقرر کیا تھا، عدالت نیب کو اپیل فائل کرنے کی یقین دہانی پر عملدرآمد کا حکم دے، اپیل دائر نہ کرنے پر چیئرمین اور پراسیکیوٹر کے خلاف توہین عدالت کی کاروائی کی۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں