The news is by your side.

Advertisement

حکومت نے 9 ماہ میں تیل کی قیمت میں 20 روپے اضافہ کیا: شیری رحمان

اسلام آباد: سینیٹر شیری رحمان نے تیل کی قیمتوں میں اضافے پر رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت نے 9 ماہ میں مہنگائی اور بے روزگاری کے علاوہ کچھ نہیں دیا۔

تفصیلات کے مطابق پی پی رہنما شیری رحمان نے کہا کہ انقلابی سرکار نے گزشتہ 9 ماہ میں تیل کی قیمت میں 20 روپے اضافہ کیا جب کہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں 3 فی صد کمی ہوئی۔

شیری رحمان نے کہا کہ حکومت کے پاس تیل کی قیمتیں بڑھانے کا کوئی جواز نہیں، کیا بجٹ سے چند دن پہلے قیمتوں میں اضافہ آئی ایم ایف کے کہنے پر کیا گیا ہے؟

انھوں نے کہا کہ ثابت ہو چکا ہے معیشت آئی ایم ایف کے حوالے کر دی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  پیٹرول مہنگا ہونے سےگھبرانا نہیں ! ابھی آئی ایم ایف کا بجٹ آنا ہے،مریم اورنگزیب

خیال رہے کہ حکومت کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا گیا ہے، پٹرول کی قیمت میں 4 روپے 26 پیسے اضافے کے بعد پٹرول 112 روپے 68 پیسے کا ہو گیا ہے۔

مسلم لیگ ن کی رہنما مریم اورنگ زیب نے بھی قیمتوں میں اضافے پر رد عمل میں کہا کہ عید سے چند دن پہلے پٹرول کی قیمت میں اضافہ عوام دشمنی ہے، گھبرانا نہیں، ابھی آئی ایم ایف کا بجٹ آنا ہے، جب بجٹ آئی ایم ایف بنائے گا تو پیشگی عیدی کی اقساط آئیں گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں