The news is by your side.

Advertisement

پشاور میں جلسے کے بعد کورونا پھیلا تو… شبلی فراز کی اپوزیشن رہنماؤں کو وارننگ

اسلام آباد: وفاقی وزیراطلاعات شبلی فرازنے اپوزشن کو وارننگ دی ہے کہ اگر پشاور میں جلسے کے بعد کورونا پھیلا تو مقدمہ اپوزیشن رہنماؤں اور منتظمین پردرج ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق ملک میں کورونا وائرس میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے، دوسری طرف پی ڈی ایم کے جلسے جاری ہیں، گورنرسندھ سمیت وفاقی وزراء نے اپوزیشن کو پشاور میں جلسے کے اعلان پر آڑے ہاتھوں لیا۔

وفاقی وزیرشبلی فراز نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا اپوزیشن غیرذمہ داری کاثبوت دینےپرتلی ہوئی ہے، انکا جلسے منعقد کرنے پر بضد ہونا انکی غیر جمہوری سوچ کاعکاس ہے، عدالتی،حکومتی احکامات کےبعدجلسےکاکوئی قانونی اوراخلاقی جوازنہیں بنتا۔

شبلی فراز کا کہنا تھا کہ ذاتی مفاد کیلئےعوام کی زندگیوں سےکھیلنا سب سےبڑی خود غرضی ہے، خیبر پختونخوامیں کیسزبڑھنے کی صورت اپوزیشن رہنماؤں اور جلسوں کےمنتظمین پرمقدمہ ہوگا۔

وفاقی وزیرریلوےشیخ رشید نے کہا کہ ووٹ کوعزت دو!لیکن ووٹر کوروناسےمرنےدویہ ہےدہرا معیار ہے، انھیں غریب کابچہ قربانی کیلئے درکار ہے جبکہ گورنر سندھ کا کہنا تھا کہ لاک ڈاون کی صورتحال میں عوامی اجتماع خوفناک ثابت ہوسکتا ہے۔

وفاقی علی زیدی نے پی ڈی ایم کے پشاور جلسے کو غیرذمہ داری کی انتہا قرار دیا جبکہ وفاقی وزیرفواد چوہدری نے سوال کیا اپوزیشن کا لوگوں کی زندگی کے ساتھ کھیلنامذاق نہیں ؟

وفاقی وزیرِحماد اظہرنےکہا کہ اپوزیشن “این آراودو تحریک”کی خاطرعوام کی جان خطرے میں ڈالنے کو تیارہیں جبکہ وفاقی مشیرداخلہ شہزاداکبرنے ٹوئٹ میں کہا کہ دوغلے پن اوراقتدارسے ہوس کی اس سےبڑی نظیرکیا ہوگی،عوام کوکھلےعام کورونا بانٹ رہے ہیں۔

معاون خصوصی ڈاکٹرشہبازگل کا کہنا تھا کہ بختاورکی منگنی پروگرام کیلئےکوروناٹیسٹ کی رپورٹ بھیجنالازم مگرخلق خدا کو جب جلسوں میں بلاتے ہو تو کیوں ان کی جانوں کاخیال نہیں رکھتے، اپنی جانیں توبہت عزیزہیں تمہیں؟یہ ہے وہ فرعونیت۔

Comments

یہ بھی پڑھیں