The news is by your side.

Advertisement

کورونا ایسی جنگ ہے جسے مل کرہی شکست دے سکتے ہیں، شبلی فراز

اسلام آباد : وفاقی وزیراطلاعات شبلی فراز کا کہنا ہے کہ حکومت یااکیلی پی ٹی آئی اس وباسےنہیں لڑسکتی، یہ ایک ایسی جنگ ہے جسے مل کرہی شکست دے سکتے ہیں، ن لیگ نےپارلیمنٹ کااجلاس بلوایا، قومی اسمبلی سےہمیں نہ پلان ملا نہ تجاویز۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیراطلاعات شبلی فراز نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کورونانےپوری دنیاکواپنی لپیٹ میں لےرکھاہے، پاکستان میں بھی وائرس تباہی پھیلارہاہے، وائرس سےنمٹنےکےلیےحکومت روڈمیپ کےساتھ کام کررہی ہے، کل وزیراعظم اوررفقا نےتفصیل سےاپنالائحہ عمل عوام کوبتایا، یہ وہ لائحہ عمل ہےجس میں ہم اپنی تمام چیزیں بروئےکارلارہےہیں۔

وفاقی وزیراطلاعات کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے8ارب ڈالرکےپیکج کااعلان کیا، پیکج کا مقصد معاشرے کے نچلے طبقوں کی مدد ہے جبکہ 1.2 کھرب کے پیکج میں ایمرجنسی کے لیے190 ارب ، 480 ارب روپےمعاشی صورتحال کی بہتری کےلیے، 570 ارب روپےعوام کی نقد مدد کے لیے اور پیٹرول اورڈیزل کی قیمت میں 70ارب رکھے گئے ہیں۔

شبلی فراز نے کہا کہ یوٹیلیٹی اسٹوز کے لیے 50ارب ،بجلی اورگیس کے لیے100 ارب رکھےگئے، احساس پروگرام کے ذریعے 104ارب روپے 85ہزارخاندانوں میں تقسیم کیے گئے ، اس صورتحال میں احساس پروگرام موثر اور شفافیت کے ساتھ شروع کیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ این اسی اوسی اوراین سی سی دو ادارے کورونا پر کام کررہےہیں،حکومت یا اکیلی پی ٹی آئی اس وبا سے نہیں لڑسکتی، وزیراعظم نے صوبوں کو تمام پیکجزمیں مساوی طور پر شامل رکھا، یہ ایک ایسی جنگ ہے جسے مل کرہی شکست دے سکتے ہیں۔

اپوزیشن کے حوالے سے وفاقی وزیراطلاعات نے کہا کہ ن لیگ نے پارلیمنٹ کا اجلاس بلوایا، ہم بھی خوش تھے، توقع تھی کہ پارلیمان میں تقاریرہوں گی رہنمائی ملے گی، لیکن ہوا کیا اپوزیشن لیڈر ہی قومی اسمبلی اجلاس سے غیر حاضر تھے، تقاریروہی تھیں جو پریس کانفرنس میں ہوتی ہیں، وہ نہیں سمجھتے تھےکہ ان کی صحت ان کوشرکت کی اجازت دیتی ہے؟ ان کی جماعت کے کافی ایسے لوگ آئے جو واقعی بیمار تھے، ان کو تکلیف ہوتی ہے تو لندن چلے جاتے ہیں۔

شبلی فراز کا کہنا تھا کہ عمران خان 30فٹ سےگرےلیکن وہ کہیں باہرنہیں گئے، عمران خان نےملک میں ہی علاج کوترجیح دی ہے، یاتویہ اقتدارمیں ہوتےہیں یاباہرہوتےہیں، قومی اسمبلی سے ہمیں نہ پلان ملا نہ تجاویز۔

انھوں نے سوال کیا کہ کیاقومی اداروں کو طاقتور بنانا نااہلی ہے،احتساب کو آگے بڑھانا نااہلی ہے، کیا غریب کاخیال رکھنا نااہلی ہے، ایک دوسرا وائرس ہے جو عوام کا خون چوستا اور ملک کوقرضوں میں ڈبوتا ہے، اس کا ثبوت ایون فیلڈاوردیگرجائیدادیں ہیں، شہبازشریف اس کے بڑے اسٹیک ہولڈر ہیں، خدانخواستہ ملک کوکچھ ہوتاہےتوانہوں نےاپنی دنیا باہر آباد کر رکھی ہے، لیکن وہ باہرجانہیں سکیں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں