The news is by your side.

Advertisement

بھارتی فوج کشمیر میں جنسی زیادتی کو بطور ہتھیار استعمال کر رہی ہے: شیریں مزاری

لاہور: وفاقی وزیر شیریں مزاری کا کہنا ہے کہ بھارتی فوج کشمیر میں جنسی زیادتی کو بطور ہتھیار استعمال کر رہی ہے، مقبوضہ کشمیر کے دو دیہات میں اجتماعی زیادتی کے واقعات ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق اے آر وائی نیوز کے پروگرام پاور پلے میں گفتگو کرتے ہوئے شیریں مزاری نے کہا کہ کشمیری خواتین سے زیادتی کے ثبوت موجود ہیں۔

مودی اور نیشنل سیکورٹی ایڈوائزر اجیت دول پر جنگی جرائم کا مقدمہ بنتا ہے۔

شیریں مزاری

وفاقی وزیر نے کہا مقبوضہ کشمیر میں خواتین کی عصمت دری کے کیسز کی طویل فہرست ہے، مودی اور نیشنل سیکورٹی ایڈوائزر اجیت دول پر جنگی جرائم کا مقدمہ بنتا ہے۔

شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ بھارت میں تمام اقلیتیں ظلم و جبر اور تشدد کا شکار ہیں، بھارتی الیکشن میں ووٹ کے لیے پاکستان کے خلاف فضا بنائی جاتی ہے، بی جی پی کے پاس پاکستان مخالف جذبات بھڑکانے کے سوا کوئی ایجنڈا نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں مسلسل انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کی جا رہی ہیں، تاہم مقبوضہ کشمیر میں تشدد کی پالیسی ناکام ہوگئی ہے، کشمیریوں نے واضح کر دیا انھیں بھارتی تسلط تسلیم نہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستان کا نئی دہلی میں ہائی کمیشن پر مظاہرین کی ہنگامہ آرائی پر احتجاج

شیریں مزاری نے کہا کہ بھارت جنوبی ایشیا کو ایٹمی جنگ کی طرف دھکیلنا چاہتا ہے، امریکا کو بھی بھارتی رویے کا نوٹس لینا چاہیے، بی جے پی کی ذہنیت انتہا پسندانہ ہے، کوئی بھی حماقت ہو سکتی ہے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ مودی کو انتخابات میں اپنی شکست واضح نظر آرہی ہے، سمجھوتا ایکسپریس دہشت گردی کا واقعہ پوری دنیا کے سامنے ہے، بھارت کوئی معلومات نہیں دے گا، سب ڈھکوسلا ہے، خطے میں دہشت گردی کرنے والا بھارت بات کیوں کرے گا، بھارت بلوچستان میں بھی دہشت گردی کرا رہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں