The news is by your side.

Advertisement

کپتانی کیسے کرنی ہے؟ شعیب اختر کا بابر اعظم کو مشورہ

راولپنڈی: قومی ٹیم کے سابق فاسٹ بولر شعیب اختر کا کہنا ہے کہ بابر اعظم کو اپنے فیصلے خود لینے پڑیں گے۔

تفصیلات کے مطابق قومی ٹیم کے سابق فاسٹ بولر شعیب اختر کا کہنا ہے کہ پی سی بی بابر اعظم کو کم از کم دو سال تک کپتان برقرار رکھے، بابر اعظم کو ٹیسٹ میں مضبوط مائنڈ سیٹ کے ساتھ کپتانی کرنی ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ بابر اعظم اگر پرانے مائنڈ سیٹ پر چلتے رہے تو کپتان تبدیل کرنے کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا، سرفراز احمد اور محمد حفیظ کو جب کپتانی کی سمجھ آئی تو دونوں کو باہر کردیا گیا۔

شعیب اختر نے سابق ٹیسٹ کپتان اظہر علی کو مشورہ دیا کہ اظہر علی کو چاہئے کہ وہ طویل فارمیٹ میں زیادہ سے زیادہ رنز کریں۔

سابق اسپیڈ اسٹار نے کہا کہ میں چاہتا ہوں مصباح الحق پی سی بی کے ساتھ اپنی مدت پوری کریں، بابر اعظم کو بھی اپنے فیصلے خود لینے ہوں گے۔

شعیب اختر کا کہنا تھا کہ اگر اب آپ نے بابر اعظم کو کپتان بنایا ہے تو پھر انہیں کم از کم دو سال تک کپتان برقرار رہنے دیں، ایسا نہیں ہونا چاہئے کہ آپ چھ ماہ میں بابر اعظم کو ناپسند کرنے لگیں اور پھر اچانک ان کی شکل، انداز سب کچھ آپ کو برا لگنے لگے۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے بابر اعظم کو ون ڈے اور ٹی 20 کے بعد ٹیسٹ ٹیم کا کپتان نامزد کیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں