The news is by your side.

Advertisement

قومی ٹیم کو واپس بھیجنے کی وارننگ، شعیب اختر کا نیوزی لینڈ کو کرارا جواب

لاہور: نیوزی لینڈ سے قومی کرکٹ ٹیم کو وطن واپس بھیجنے کی وارننگ پر سابق سافٹ بولر شعیب اختر نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ پر برس پڑے اور خوب تنقید کا نشانہ بنایا۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز پاکستانی اسکواڈ کے 6 ارکان کے کرونا ٹیسٹ مثبت آئے جس پر نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے آخری وارننگ دی کہ ایس او پیز کی خلاف ورزی کے نتیجے میں پاکستان ٹیم کو وطن واپس بھیج دیا جائے گا۔

اس حوالے سے تبصرہ کرتے ہوئے شعیب اختر نے اپنے یوٹیوب چینل پر ویڈیو اپ لوڈ کی جس میں ان کا کہنا تھا کہ نیوزی لینڈ کو واضح پیغام دینا چاہتا ہوں یہ کوئی کلب ٹیم نہیں ہے بلکہ پاکستان کی قومی ٹیم ہے۔

انہوں نے نیوزی لینڈ بورڈ کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ ہمیں آپ کی ضرورت نہیں ہے، پاکستان کی کرکٹ ابھی ختم نہیں ہوئی، آپ کو ہمارا حسان مند ہونا چاہتے تھا کہ مشکل وقت میں پاکستان نے دورہ کیا، اس طرح کے بیانات دینے سے پہلے نیوزی لینڈ کو گریز اور محتاط رہنا چاہیے۔

’’قومی ٹیم کی اور ایک اور غلطی دورہ نیوزی لینڈ کا خاتمہ کرسکتی ہے‘‘

سابق فاسٹ بولر نے پی سی بی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اگر ٹیم واپس بھیجی گئی تو نیوزی بورڈ سے تعلق ختم کردینا چاہیے، قومی ٹیم کو نیوزی لینڈ بھیجنے کے لیے کمرشل کے بجائے چارٹرڈ طیارہ استعمال کرنا چاہیے تھا تاکہ وائرس کا خطرہ کم رہتا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں