The news is by your side.

Advertisement

پندرہ سوروپے کے معمولی قرض کی عدم ادائیگی پر مقروض‌کو قتل کردیا گیا

صادق آباد: صرف پندرہ سور روپے کے تنازعہ پر جھگڑے کے دوران قرض دینے والے نے مقروض غریب محنت کش کو تشدد کر کے ہلا ک کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق صادق آباد علاقے بھونگ میں صرف پبدرہ سو روپے کے تنازعے نے خاندان کے کفیل کی جان لے لی،پندرہ سو روپے کے مقروض شہری محمد سلیم 15 سو روپے کی معمولی رقم لوٹانے کے لیے مزید مہلت چاہتا تھا تا ہم قرضہ دینے والے نے مہلت دینے کے بجائے تشدد کر کے ہلاک کردیا۔

پولیس کے مطابق مقتول محمد سلیم کی محلے میں چھوٹی سے دکان ہے جس کے لیے اُس نے جلیل نامی شخص کی بیوریج ایجینسی سے عید کے موقع پر کولڈ ڈرنکس چند دنوں کے ادھار پر لی تھی عید کے بعد محمد سلیم نے تمام رقم بیوریج ایجینسی کے مالک کو واپس کردی تھی تا ہم 15 سو روپے مزید بقایا تھے جس کے طلب کرنے پر دونوں کے درمیان جھگڑا ہو گیا،جھگڑے کے دوران ایجینسی کے مالک جلیل کے ساتھیوں نے مقروض کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جس کی تاب نہ لاتے ہوئے محمد سلیم موقع پر ہی ہلاک ہو گیا۔

محمد سلیم کے ورثاء اور اہل محلہ نے ملزمان کی عدم گرفتاری پر احتجاج کرتے ہوئے مرکزی شاہراہ بن کردی،اہلِ محلہ کا کہنا تھا کہ ملزمان با اثر ہیں جس کی وجہ سے پولیس ملزمان کے خلاف کاروائی نہیں کر رہی ہے۔

ورثاء نے اعلی حکام سے ملزمان کی عدم گرفتاری پر نوٹس لینے کی درخواست کرتے ہو ئے کہا کہ ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے اور ملزمان کو فی الفور گرفتارکر کے کیفرِ کردار تک پہنچایا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں