The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں ماسک کی قلت، قیمتوں میں اضافہ

ریاض: کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے بعد سعودی عرب میں ماسک کی قلت پیدا ہوگئی ہے جبکہ بعض مقامات پر اس کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوگیا ہے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی عرب میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے بعد طبی ماسک کی قلت پیدا ہوگئی ہے جبکہ قیمتوں میں اضافہ بھی ہوگیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق فارمیسیوں اور دکانوں میں شیلف حفاظتی ماسک سے خالی پڑے ہیں، بعض دکانوں اور فارمیسیوں میں یہ بورڈ بھی چسپاں کردیا گیا ہے کہ ہمارے یہاں حفاظتی ماسک ختم ہوچکے ہیں۔

دکانداروں کا کہنا ہے کہ حفاظتی ماسک کا ذخیرہ ختم ہوگیا ہے، فی الوقت مارکیٹ میں جو ماسک دستیاب ہیں وہ مہنگے ہیں۔

ایک دکاندار 35 ریال میں ماسک کا ایک پیکٹ فروخت کرتے ہوئے یہ بھی کہہ رہا تھا کہ دوسری دکانوں پر یہی پیکٹ 50 ریال سے کم میں نہیں ملے گا۔

ایک فارماسسٹ کا کہنا تھا کہ ہمارے یہاں ماسک کا ذخیرہ ختم ہوچکا ہے البتہ این 95 ماسک دستیاب ہیں، ان کی قیمت 150 سے 200 ریال کے درمیان ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ میرا مشورہ ہوگا کہ عام لوگ یہ ماسک نہ خریدیں، یہ عام لوگوں کے لیے نہیں بلکہ ڈاکٹروں اور خصوصی طبی عملے کے لیے ہیں، عام آدمی کو اس طرح کے ماسک استعمال کرنے کی کوئی ضرورت نہیں۔

ایک اور فارمیسی نے ایسے حفاظتی ماسک دکھائے جن پر خوبصورت نقوش بنے ہوئے تھے، اس کی قیمت 15 تا 30 ریال بتائی گئی۔ ایک اور فارمیسی پر 5 ماسک 10 ریال میں بیچے جارہے ہیں۔

کئی صارفین نے تاجروں پر الزام لگایا کہ وہ من مانی قیمت کے لیے ماسک مارکیٹ پر اجارہ داری کی کوشش کر رہے ہیں۔

ایک شہری کا کہنا تھا کہ اسے ایک دکان سے ماسک کا کارٹن 40 ریال میں مل گیا، اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ہر ایک اس سلسلے میں من مانی کررہا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں