The news is by your side.

Advertisement

ڈیڑھ کروڑ سے زائد ٹیکس نادہندگان کے خلاف گھیرا تنگ

اسلام آباد :  وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا ہے کہ ٹیکس نہ دینے والے 1 کروڑ 60 لاکھ افراد کے خلاف گھیرا تنگ کیا جارہا ہے، نادراسےاس ضمن میں ڈیٹاحاصل کر رہے ہیں۔

اسلام آباد میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شوکت ترین نے کہا کہ ٹیکس سےجاری اخراجات پورےکئےجاتےہیں، ٹیکس ریونیو جب تک نہیں ہوگامعاشرہ نہیں چل سکتا، لوگوں کوکہتےہیں ٹیکس دیں اس لئےٹیکس ڈائریکٹری جاری کررہےہیں۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ ہماری ٹیکس بلحاظ جی ڈی پی کی شرح کم ہے، 1کروڑ80لاکھ افراد ٹیکس دینےکےقابل مگر20لاکھ ٹیکس دہندہ ہیں، ٹیکس نہ دینے والوں  کے خلاف گھیرا تنگ کیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ نادراسےاس ضمن میں ڈیٹاحاصل کیاجارہاہےاور اس  پر مزید کام ہورہاہے، 15ملین سے زائد افرادآمدن سےکم ٹیکس دیتےہیں ان کونوٹس دیےجائیں گے، ہمارایہ رویہ ہوناچاہیےکہ سب نےٹیکس دیناہے۔

شوکت ترین نے کہا کہ کوئی مقدس گائےنہیں، ٹیکس کلچر بنانے کے لیے اراکین پارلیمنٹ سے شروعات کی گئی ہیں، ٹیکس ڈائریکٹری میں شفافیت لانےکیلئےکوشش کی جارہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ٹیکس وفاق بھی اورصوبےبھی اکھٹاکرتےہیں، ٹیکس اداروں میں ہم آہنگی ہونی چاہیے، یہ نہ ہوکہ صوبائی ٹیکس اتھارٹیزاورایف بی آر ٹیکس کیلئےہراساں کرے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ ہماری کوشش ہے  6سال میں ٹیکس بلحاظ جی ڈی پی کی شرح20فیصدپرلےکرجائیں، ایف بی آرکواس ضمن میں مبارکباد پیش کرتا ہوں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں