The news is by your side.

Advertisement

ماڈل نایاب کی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں اہم انکشاف

لاہور کے علاقے ڈیفنس میں قتل ہونے والی ماڈل نایاب کیس کی تفتیش میں اہم پیشرفت ہوئی ہے۔

مقتولہ کی پوسٹ مارٹم رپورٹ آ گئی ہے جس میں زیادتی ثابت نہیں ہوئی جب کہ نایاب کےقتل ‏کی وجہ کا تعین نہیں کیا جا سکا۔

پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق نایاب کےگلےپرتشددکےنشانات ملےہیں مقتولہ کےمنہ میں خون ‏جمع ہواتھا اور مرنے سےپہلےمقتولہ نےقےبھی کی تھی۔

مقتولہ کاپوسٹ مارٹم موت کے 40سے48گھنٹے بعد کیا گیا اور موت کی حتمی وجہ کاتعین فرانزک ‏ایجنسی کی رپورٹ میں ہوگا۔

ماڈل نایاب قتل کیس میں پولیس کی تفتیش جاری ہے ، پولیس کا کہنا ہے کہ قتل کی رات مقتولہ ‏نایاب دوستوں کی پارٹی میں گئی ، پارٹی میں مقتولہ نایاب کا دوستوں سے جھگڑا ہوا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ جھگڑے کےبعدنایاب پارٹی چھوڑ کر فارم ہاوس سے آگئی، نایاب نے جھگڑے ‏کے بارے میں اپنے سوتیلے بھائی کو فون پربتایا، فون کال کے بعد سوتیلا بھائی مقتولہ نایاب ‏سےملنے پہنچا ، اسے آئس کریم کھلائی اورگھرچھوڑ دیا۔

پولیس کی مقتولہ سے جھگڑا کرنے والے دوستوں سے تفتیش جاری ہے اور پولیس نے کال ڈیٹا سے ‏وقوعہ کے دن کا ریکارڈ بھی حاصل کرلیا ہے

گذشتہ روز پولیس کا کہنا تھا کہ مقتولہ نایاب سےزیادتی ثابت نہیں ہوئی، قاتل نے لاش بےلباس ‏کرکےقتل کو زیادتی کا رنگ دینے کی کوشش کی۔

پولیس نے ماڈل کے زیر استعمال گاڑی تحویل میں لے لی ہے اور مقتولہ کے موبائل ڈیٹا سے ‏تفتیش آگے بڑھائی جارہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں