The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں کورونا سے متعلق تحقیق میں اہم انکشافات

اسلام آباد: ملک میں کورونا کے پھیلاؤ سے متعلق تحقیق کے دوسرے مرحلے میں اہم انکشافات سامنے آئے ہیں۔

ترجمان وزارت صحت کے مطابق کورونا سیروپریویلنس اسٹڈی کامیابی سےمکمل ہوئی، کورونا سیروپریویلنس اسٹڈی10اضلاع میں منعقدہوئی اور اسٹڈی کا دوسرار اؤنڈ گزشتہ ماہ منعقد ہوا۔

ترجمان نے بتایا کہ ہیلتھ سروسز اکیڈمی نے اسٹڈی ڈبلیو ایچ او کےتعاون سےکی اور دوران تحقیق متفرق شہریوں کے اینٹی باڈیز ٹیسٹ کئےگئے۔ دوران تحقیق کوروناسےمتاثرہ افرادکی شرح معلوم کی گئی،تحقیق میں7 فیصد شہریوں میں کورونا اینٹی باڈیز پائی گئیں۔

اسٹڈی رپورٹ کے مطابق ملک کےشہری اضلاع میں کورونا کا پھیلاؤ زذیادہ ہے جب کہ دیہی اضلاع میں کورونا وائرس کا پھیلاؤ کم ہے، شہری و دیہی اضلاع میں کورونا کے پھیلاؤ کی شرح میں فرق کم ہو رہا ہے۔

بظاہر کورونا کی علامات نہ رکھنے والے افرادخطرناک ہیں

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ چھوٹےشہروں اور دیہاتوں میں ایس اوپیز پر عملدرآمد بہتر بنانا ہوگا، کورونا پازیٹو کے باوجود بہت سےافرادمیں علامات ظاہر نہیں ہوتیں، بظاہر کورونا کی علامات نہ رکھنے والے افرادخطرناک ہیں۔

ترجمان وزارت صحت کا کہنا ہے کہ کورونا اسٹڈی کےنتائج سےمستقبل کی فیصلہ سازی میں مددملےگی، اسٹڈی سے متوقع کوروناویکسین کےاہداف کی نشاندہی میں مددملےگی۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان کا کہنا ہے کہ کورونا وبا کے باعث شرح اموات میں اضافہ دیکھا جا رہا ہے، وبا پھیلنےکےساتھ ساتھ اپناخطرناک اثر بھی دکھا رہی ہے، بہترحالات میں کورونا سےشرح اموات2فیصدسےنیچے اور اب7.5فیصدہوگئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں