سندھ اسمبلی کا اجلاس ہنگامہ آرائی کی نظر، وزیراعلیٰ تقریر نہ کر سکے -
The news is by your side.

Advertisement

سندھ اسمبلی کا اجلاس ہنگامہ آرائی کی نظر، وزیراعلیٰ تقریر نہ کر سکے

کراچی : سندھ اسمبلی میں حکومت اور اپوزیشن کے درمیان ہونے والی ہنگامہ آرائی نے سائیں سرکار قائم علی شاہ کو تقریر ہی نہ کرنے دی ۔

تفصیلات کے مطابق اسپیکر سراج درانی کی زیر صدارت سندھ اسمبلی کے اجلاس میں وزیر اعلیٰ سندھ اپنے خیالات کا اظہار نہ کر سکے۔

اپوزیشن اراکین نے نے شور شرابا کیا اور وزیر اعلیٰ کی تقریر کے دوران مداخلت کی کوشش کی۔ وزیر اعلیٰ ایوان میں خطاب کرنے لگے تو اپوزیشن اراکین کی جانب سے ان کی تقریر کے دوران ہنگامہ کیا گیا اور شدید نعرے بازی ہوئی۔

اراکین اپنی نشستوں سے کھڑے ہوگئے، ایوان میں ایم کیو ایم کے رہنما دیوان چند چاؤلہ وزیراعلٰی سندھ پر برس پڑے ۔ انہوں نے جھولی پھیلا کر سکھر کے لئے پانی مانگا۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے دیوان چند چاؤلہ کے مطالبے کو ایکٹنگ قرار دے دیا۔ جس پر اپوزیشن ارکان بھڑک اٹھے۔ اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہار الحسن اور صوبائی وزیر نثار کھوڑومیں تلخ کلامی نےگرما گرمی بڑھادی۔

ہنگامہ آرائی میں وزیراعلٰی قائم علی شاہ تقریر نہ کرسکے۔ اس دوران رکن اسمبلی شرجیل میمن نے اپوزیشن اراکین کے شور شرابے پر کہا کہ ان کا رویہ مناسب نہیں جیسے یہ شور کر رہے ہیں ویسے ہم بھی کر سکتے ہیں۔

اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی سب کو بیٹھنےکی تلقین کرتےرہ گئے، لیکن اراکین نے ایک نہ مانی۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں