کھلونا پستول پر پابندی عائد، 18 دکان دار گرفتار -
The news is by your side.

Advertisement

کھلونا پستول پر پابندی عائد، 18 دکان دار گرفتار

کراچی : محکمہ داخلہ سندھ نے کھلونا پستول پردو ماہ کے لیے پابندی لگادی جس کے بعد پولیس نے 18 دکان داروں کو گرفتار کرکے بڑی تعداد میں کھلونا پستولیں ضبط کرلیں۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ داخلہ سندھ نے کھلونا پستول پر پابندی لگادی اور نوٹی فکیشن جاری کر دیا گیا، جس کے مطابق کراچی، حیدر آباد، سکھر اور لاڑکانہ سمیت سندھ بھر میں کھلونا پستول کی خرید و فروخت پر پابندی  دفعہ 144 کےتحت لگائی گئی ہے۔

محکمہ داخلہ سندھ کے مطابق پابندی کا فیصلہ بچوں کے ذہن میں منفی اثرات کے باعث کیا گیا، کراچی میں اسٹریٹ کرمنلز بھی کھلونا پستول سے واردات میں ملوث رہے ہیں، رمضان المبارک میں اسٹریٹ کرائم کے واقعات میں اضافہ ہو جاتا ہے۔

نوٹی فکیشن کے مطابق فوری طور پر ساٹھ روز کے لیے کھلونا ہتھیاروں کی خرید و فروخت پر پابندی عائد کر دی گئی، یہ پابندی حیدر آباد اور سکھر میں لگائی گئی ہے۔

صوبائی محکمہ داخلہ کے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ کھلونا پستول کے استعمال سے کوئی بڑا ناخوشگوار واقعہ بھی پیش آسکتا ہے۔

حکم جاری ہونے کے بعد 18 افراد گرفتار

 حکم نامہ جاری ہونے کے بعد پولیس نے کھلونا پستول فروخت کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کرتے ہوئے 18 افراد کو گرفتار کرلیا۔

اے آر وائی نیوز کے نمائندہ سلمان لودھی کے مطابق اسٹریٹ کرائمز کی بعض وارداتوں میں اصل کے بجائے نقلی کھلونا پستول بھی استعمال ہوئے جنہیں چھوئے بغیر نقلی ہونے کا تعین نہیں کیا جاسکتا۔

ایسے واقعات کے بعد محکمہ داخلہ سندھ نے کھلونا پستولوں پر بھی پابندی عائد کی، اے آر وائی نے شہر بھر میں کھلونا پستولوں کی فروخت سے متعلق خبر بھی جاری کی تھی ، اب آج پولیس نے کریک ڈاؤن کرتے ہوئے اولڈ سٹی ایریاز سے 18 دکان داروں کو گرفتار کرکے ہزاروں کی تعدا میں کھلونا بندوقیں اور پستولیں برآمد کرلی ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں