The news is by your side.

Advertisement

سندھ حکومت کا آئندہ بجٹ میں 7 محکموں کے لیے نئی اسکیمز شامل نہ کرنے پر غور

کراچی: سندھ حکومت نے آئندہ بجٹ میں 7 محکموں کے لیے نئی اسکیمز شامل نہ کرنے پر غور شروع کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مالی سال 23-2022 کے لیے سندھ کے میزانیے کی تیاری جاری ہے، یہ بجٹ 14 جون کو پیش کیا جائے گا۔

سندھ حکومت 7 محکموں کے لیے بجٹ میں نئی اسکیمز شامل نہ کرنے پر غور کر رہی ہے، جب کہ سالانہ ترقیاتی بجٹ میں 30 ارب روپے اضافے کی تجویز دی گئی ہے۔

آئندہ مالی سال کے بجٹ میں ضلعی ترقیاتی پروگرام کے لیے 32 ارب مختص کرنے کی تجویز ہے، جب کہ نئی اسکیمز کا بجٹ 18 ارب روپے کم کرنے کی تجویز ہے۔

غیر ملکی امداد سے چلنے والے منصوبوں کا تخمینہ 100 ارب روپے متوقع ہے، رواں مالی سال کے مقابلے میں آئندہ بجٹ میں صحت کے مجموعی بجٹ میں صرف 9 ملین روپے اضافے کی تجویز دی گئی ہے۔

آئندہ بجٹ میں سندھ کا ہیلتھ سیکٹر کا مجموعی بجٹ 18 ہزار 509 ملین روپے کرنے کی تجویز ہے، جب کہ تعلیم کا بجٹ 27 ہزار 449 ملین روپے کرنے کی تجویز ہے، اس کے ساتھ آئی ٹی، ٹرانسپورٹ، زراعت، داخلہ کے بجٹ میں اضافہ نہ کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔

سندھ حکومت آئندہ مالی سال کے میزانیے کو 10 جون تک حتمی شکل دے گی، اس سلسلے میں تمام محکموں کو ہدایت جاری کر دی گئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں