site
stats
اہم ترین

سندھ کابینہ نےآئی جی سندھ کی تبدیلی کی منظوری دے دی

AD Khawaja

کراچی : سندھ کابینہ نے آئی جی سندھ پولیس اے ڈی خواجہ کو ہٹانے کی منظوری دے دی، کابینہ نے بائیس گریڈ کے سردارعبد المجید دستی کونیا آئی جی بنانے کی سفارش بھی کردی۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیر صدارت کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں آئی جی سندھ پولیس اے ڈی خواجہ کی موجودگی میں سیکریٹری سروسزنے آئی جی کو تبدیل کرنے کی سفارش پیش کی۔

سیکریٹری سروسزنے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ اے ڈی خواجہ کو 2016 میں او پی ایس پر آئی جی لگایا گیا جبکہ سپریم کورٹ نے تمام او پی ایس کی پوسٹوں کوختم کردیا ہے۔

اجلاس میں سیکریٹری سروسزنے سفارش کی کہ سندھ حکومت اے ڈی خواجہ کی خدمات وفاق کےحوالےکرے اور 22 گریڈ کے سردارعبدالمجید دستی کو آئی جی سندھ بنایا جائے۔

اے ڈی خواجہ نے جواب دیا کہ میری تقرری کے وقت او پی ایس کےخلاف فیصلہ موجود تھا، صوبوں میں آئی جی گریڈ بی 21 کے بھی موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کے موجودہ آئی جی کی گریڈ بی 22 میں ترقی ہوئی۔

اس سے قبل اے ڈی خواجہ نے بریفنگ میں تجویز پیش کی کہ آئی جی کو پولیس افسرکے تبادلے کا اختیاردیا جائے جس کووزرا کمیٹی نے رد کردیا۔

خیال رہے کہ رواں سال یکم اپریل کوسندھ حکومت نے آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ کی خدمات وفاق کے حوالے کردی تھیں اور ان کی جگہ اے آئی جی سندھ عبدالمجید دستی کو عارضی طور پر نیا آئی جی سندھ مقررکیا تھا۔


قائم مقام آئی جی سندھ کا نوٹی فیکیشن معطل


بعدازاں سندھ ہائی کورٹ نے اے ڈی خواجہ کو عہدے سے ہٹانے کےفیصلے کو معطل کرکے انہیں مقررہ مدت تک ذمے داریاں نبھانے کا حکم دیا تھا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top