سندھ کی تعلیمی صورتحا ل دیگر صوبوں سے بدتر قرار -
The news is by your side.

Advertisement

سندھ کی تعلیمی صورتحا ل دیگر صوبوں سے بدتر قرار

کراچی: صوبہ سندھ دیگر شعبوں کی طرح تعلیم میں بھی دیگر صو بوں سے پیچھے ہے، تفصیلات کے مطابق حکومت سندھ کی تعلیم کے شعبے میں بدترین کارگردگی کا پول کھل گیا۔

اسی حوالے سے نجی ادارے نے ایک تحقیقاتی رپورٹ شائع کی ہے جس کے مطا بق چاروں صو بوں میں سندھ کی تعلیمی صورتحا ل کو سب سے بدتر قرار دیا گیا ہے۔

رپورٹ میں صوبہ پنجاب، بلوچستان اور خیبر پختون خوا کوشعبہ تعلیم میں بی گریڈ جبکہ صوبہ سندھ کو سی گریڈ دیا گیاہے۔

جائزہ رپورٹ کے مطابق سندھ اسمبلی کے ایک سو تیس ممبران میں سے صرف پانچ ممبر ان کے حلقوں میں سے تھوڑی بہت بہتری آئی جن میں وزیرِ اعلٰی سندھ کے انتخابی حلقے پی ایس۔29(خیرپور۔1) کوبی گریڈ ملاہے ۔

جبکہ صوبے کے باقی تمام ممبران صوبائی اسمبلی نےبی یا سی گریڈ حاصل کرسکے، سب سے بدترین کارکردگی دکھانے والے حلقوں میں عزیز احمد جتوئی کا حلقہ پی ایس۔41 (لاڑکانہ۔ قمبر شہداد کوٹ) سامنے آیا جس کو بنیادی سہولیات کی فراہمی کے حوالے سے ای گریڈ ملا ۔

دو ہزار تیرہ کے الیکشن کے بعدسے اسکولوں میں سہولیات کے حوالے سے زیادہ بہتری نہیں آئی یہی وجہ ہے کہ پچپن فیصد انتخابی حلقوں نے سی یا اس سے کم گریڈ حاصل کیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سندھ حکومت کے ممبران صوبائی اسمبلی اپنے صوبے میں تعلیم کی صورتحال میں بہتری چاہتے ہیں تو چالیس اسکولوں میں بنیادی سہولیات کی فراہمی سے وہ اس کام کا آغاز
کر سکتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں