The news is by your side.

Advertisement

بارش میں کراچی کے شہریوں کی اموات، صوبائی وزیرتوانائی نے کے الیکٹرک افسران کو طلب کرلیا

کراچی: وزیر توانائی سندھ امتیاز شیخ نے حالیہ بارشوں کے دوران کرنٹ سے قیمتی جانوں کے ناقابل تلافی نقصان پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کے الیکٹرک افسران کو طلب کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیرتوانائی نے کے الیکٹرک کے افسران سے رابطہ کیا اور  شہریوں کے جاں بحق ہونے پر اُن کی باز پرس کرتے ہوئے جمعرات کے روز اپنے دفتر طلب کیا۔

صوبائی وزیر توانائی سندھ امتیاز شیخ افسران کو ہدایت دی کہ کے الیکٹرک فرائض کی ادائیگی میں غفلت اور لاپرواہی برتنے والوں کا ہر صورت تعین کرے اور جو بھی مجرمانہ غفلت کا مرتکب پایا جائے اُسے قرار واقعی سزا دی جائے۔ امتیاز شیخ نے کے الیکٹرک افسران کو ہدایات دیں کہ وہ کراچی میں کرنٹ لگنے سے ہونے والی ہلاکتوں کی تحقیقاتی رپورٹ جلد مکمل کر کے حکومت سندھ اور نیپرا کو ارسال کریں۔

وزیر توانائی نے کہا کہ بے گناہ افراد اور معصوم بچوں کی کرنٹ لگنے سے اموات کا کوئی مداوا نہیں ہوسکتا ۔امتیاز شیخ نے کے الیکٹرک کو ہدایت کی کہ سوگوار خاندانوں کی لازمی مالی معاونت کی جائے اور مستقبل میں ایسے واقعات کے تدارک کے لیے موثر حکمت عملی مرتب کی جائے۔

کے الیکٹرک افسران نے صوبائی وزیر کو حالیہ بارشوں میں ہونے والے جانی نقصانات پر کمپنی کی جانب سے ذمہ داروں کے تعین کے حوالے سے جاری تحقیقات کے حوالے سے آگاہ بھی کیا۔ امتیاز شیخ نے کہا کہ کے الیکٹرک اپنے نظام کو بہتر کرے اور موسمی برسات میں کھمبوں میں کرنٹ دوڑنے اور تاروں کے گرنے کی شکایات کا مکمل تدارک کرے تاکہ آئندہ ایسا کوئی اندوہناک حادثہ پیش نہ آئے۔

یاد رہے کہ شہر قائد میں ہونے والی حالیہ بارشوں میں کرنٹ لگنے کے مختلف واقعات میں 20 افراد جاں بحق ہوئے جن میں بچے اور ایک سات سالہ بچی بھی شامل ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں