The news is by your side.

Advertisement

سندھ حکومت کا 4لاکھ ٹن گندم خریدنے کا فیصلہ

کراچی: وزیرخوراک سندھ ہری رام کا کہنا ہے کہ 3 لاکھ ٹن گندم اوپن مارکیٹ سے خریدی جائے گی جبکہ ایک لاکھ ٹن گندم وفاقی ادارے پاسکو سے خریدی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق وزیرخوراک سندھ ہری رام نے آٹے کے بحران، قیمتوں میں اضافے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ ذخیرہ اندوزوں نے آٹے کا مصنوعی بحران، قیمتوں میں اضافہ کیا، ذخیرہ اندوزوں اور ملوث افسران کے خلاف کارروائی شروع کر دی۔

ہری رام نے کہا کہ آٹے کی قیمتوں میں اضافے کو واپس لینے کے لیے گندم کی ترسیل بڑھا دی، سندھ کے پاس 7 لاکھ ٹن گندم موجود ہے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ خوراک نے گندم، آٹے کی بین الصوبائی نقل وحمل روکنے کے لیے احکامات جاری کردیے ہیں۔

وزیرخوراک سندھ نے مزید کہا کہ 3 لاکھ ٹن گندم اوپن مارکیٹ سے خریدی جائے گی جبکہ ایک لاکھ ٹن گندم وفاقی ادارے پاسکوسے خریدی جائے گی۔

سندھ میں گندم کی قیمت بڑھنے کی وجہ بوریاں غائب ہونا ہے: خرم شیر زمان

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ پی ٹی آئی رہنما خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ گندم کی قیمت بڑھنے کی وجہ بوریاں غائب ہونا ہے، کاش وزیراعلیٰ سندھ گندم کی بوریاں غائب ہونے پر وزیر اعظم کو خط لکھتے۔

خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ سندھ کا مال لوٹا جا رہا ہے، گندم کی بوریاں غائب ہو رہی ہیں، بتایا جائے کہ گندم کی چوری میں ملوث افسران کے خلاف کیا کارروائی ہوئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں