The news is by your side.

Advertisement

کرونا کیسز میں کمی، سندھ حکومت کا تعلیمی اداروں سے متعلق بڑا فیصلہ

کراچی: سندھ سرکار نے کرونا کیسز میں کمی کے بعد صوبے بھر میں سیکنڈری کلاسز کو ایس او پیز کے تحت کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کئے گئے ٹوئٹ میں وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے کہا کہ وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کی زیرصدارت سندھ کرونا ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا، اہم اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ چھٹی سےآٹھویں کلاسز کل سے50فیصدحاضری کیساتھ کھول دی جائیں گی۔

سعید غنی نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ صورتحال میں مزید بہتری پر پرائمری کلاسز21جون سےشروع کردی جائےگی، کلاسز کےآغاز کیلئے اسکول عملےکا ویکسی نیشن لگوانا لازمی ہوگا۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی صدارت میں کرونا وائرس پر صوبائی ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا، اجلاس میں صوبائی وزراء، ڈاکٹر عذرا پیچوہو، سعید غنی، ناصر حسین شاہ، جام اکرام اللہ دھاریجو، مرتضیٰ وہاب، چیف سیکریٹری، آئی جی پولیس، ایڈیشنل چیف سیکریٹری داخلہ، صوبائی سیکریٹریز، ڈاکٹر باری، ڈاکٹر فیصل، ڈاکٹر سارہ خان، ڈاکٹر قیصر سجاد، کور فائیو اور رینجرز کے نمائندے شریک ہوئے۔

اجلاس کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ صوبے میں کووڈ 19 کے مریضوں کی تشخیص کی شرح 4.5 فیصدپرآگئی ہے اور اسپتالوں پر اب دباؤ کچھ کم ہوا ہے۔

مراد علی شاہ نے بتایا کہ بارہ جون کو ایئرپورٹ پر مسافروں کے37105 ٹیسٹ کیےگئے، 37105مسافروں میں 80 مثبت آئےتھے، ابتک آنے والے مسافروں میں سے50 صحتیاب ہوگئےہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے بتایا کہ کراچی میں کل9.5نئےکیسز تشخیص ہوئے، حیدرآباد میں تشخیص کی شرح 5.65 فیصد ہے، جون میں ابتک کرونا کے باعث 192 مریض انتقال کرگئے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں