The news is by your side.

Advertisement

سندھ حکومت نے خلاف ضابطہ تعمیرات کے لیے آرڈیننس لانے کا فیصلہ کر لیا

کراچی: سندھ حکومت نے خلاف ضابطہ تعمیرات کے لیے آرڈیننس لانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ تعمیرات اور رہائشی یونٹس کو ریگولرائز کرنے کے لیے آرڈیننس لانے کا فیصلہ کیا گیا ہے، سندھ حکومت کی جانب سے خلاف ضابطہ تعمیرات کے لیے آرڈیننس لایا جا رہا ہے۔

اس آرڈیننس کے ذریعے مقررہ عرصے میں تمام غیر تجارتی تعمیرات کو تحفظ دیا جائے گا، آرڈیننس کے ذریعے ایک کمیشن بنایا جائے گا، جو سرکاری زمین پر رہائشی یونٹس اور قواعد کی خلاف ورزی کی نشان دہی کرے گا۔

ذرائع کے مطابق زمینوں کو بعض شرائط اور جرمانے کے ساتھ ریگولرائز کیا جائے گا، آرڈیننس میں خلاف ضابطہ تعمیرات اور قبضوں پر سزائیں بھی تجویز کی جائیں گی، تعمیراتی قوانین کی خلاف ورزی پر بھی سزا تجویز کی جائے گی۔

سندھ کابینہ کی منظوری کے بعد آرڈیننس توثیق کے لیے گورنر کو بھیجا جائے گا، جن کی منظوری کے بعد آرڈیننس نافذالعمل ہوگا۔

واضح رہے کہ سندھ حکومت کا مجوزہ آرڈیننس اسمبلی کی منظور کردہ قرارداد پر بنایا جا رہا ہے، آرڈیننس کی روشنی میں کمیشن کی سربراہی ایک ریٹائرڈ جج کریں گے، یہ کمیشن تعین کرے گا کہ کون سے رہائشی یونٹس ریگولرائز کرنے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں