The news is by your side.

Advertisement

سندھ حکومت کا بزرگ قیدیوں کو رہا کرنے کا فیصلہ

کراچی : سندھ حکومت نے بزرگ  قیدیوں کو رہا کرنے  کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا معمراور بیمارقیدیوں کی رہائی سندھ پریژن ایکٹ کےتحت کی جائےگی ، محکمہ جیل خانہ جات سندھ 5 بیمار اور معمرقیدیوں کو رہا کرچکا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت نے بزرگ سزایافتہ مردوخواتین قیدیوں کی رہائی کا فیصلہ کرلیا ، محکمہ داخلہ سندھ نے کہا کسی جان لیوابیماری میں مبتلا قیدیوں کو بھی رہا کیاجائےگا، معمروخطرناک بیماریوں میں مبتلا قیدیوں کی رہائی کا فیصلہ میڈیکل بورڈ کے ذریعے ہوگا۔

سندھ حکومت نے 60 سالہ خواتین قیدیوں کو سزا کا نصف مکمل کرنے پر رہائی کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا 65 سال یا زائد عمر کے مرد قیدیوں کو مروجہ قانون کے تحت رہائی دی جائےگی ، معمراوربیمارقیدیوں کی رہائی سندھ پریژن ایکٹ کےتحت ہوگی۔

خیال رہے سندھ اسمبلی نے مئی2019میں جیل، قیدیوں سےمتعلق مسودہ قانون منظورکیاتھا جبکہ محکمہ جیل خانہ جات سندھ 5بیمار،معمرقیدیوں کو رہا کرچکاہے اور دائمی امراض کےشکار2قیدیوں کی رہائی کے لیے کارروائی آخری مراحل میں ہے۔

آئندہ چنددنوں میں 2سزایافتہ قیدیوں کوعمراوربیماری کےسبب رہاکیاجائےگا ، صوبائی محکمہ داخلہ کا کہنا ہے کہ سندھ کی جیلوں میں قید40سزایافتہ قیدیوں کی رہائی کےلیےجائزہ لیاجارہا ہے۔

مزید پڑھیں :  وزیراعظم کا عمر رسیدہ بیمار قیدیوں کی رہائی کا فیصلہ

یاد رہے گذشتہ روز وزیراعظم نے 65 سال سے زائد عمر کے ایسے قیدی جو بیمار ہیں اور کسی گھناؤنے جرم کے مرتکب نہیں ان کی رہائی کا فیصلہ کیا تھا، وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی و ترقی اسد عمر نے کہا تھا کہ حکومت نے ایک ایسے پاکستان کی جانب کے ایک اور قدم بڑھایا ہے، جس میں حکومت کی اولین ترجیح ملک کا کمزور طبقہ ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں