The news is by your side.

Advertisement

سندھ کورونا وائرس ایمرجنسی ریلیف آرڈیننس کا مسودہ تیار

کراچی : سندھ کورونا وائرس ایمرجنسی ریلیف آرڈیننس کا مسودہ تیار کرلیا گیا ، جس کے تحت متاثرہ طبقات کو سماجی معاشی کاروباری ریلیف دیاجائےگا جبکہ آرڈیننس کی خلاف ورزی پر بسزا کا اعلان کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ کوروناوائرس ایمرجنسی ریلیف آرڈیننس کا مسودہ تیار کرلیا گیا ، محکمہ قانون سندھ کی جانب سے آرڈیننس کا مسودہ گورنر کو منظوری کے لیے ارسال کیا جائے گا۔

آئین پاکستان کےآرٹیکل 128کےتحت آرڈیننس کا مسودہ تیارکیاگیا، مسودے کے مطابق آرڈیننس یکم اپریل سےپورے سندھ میں نافذ العمل ہوگا، آرڈیننس کے تحت متاثرہ طبقات کو سماجی معاشی کاروباری ریلیف دیاجائےگا۔

مسودے میں سندھ کوروناایمرجنسی ریلیف آرڈیننس کی خلاف ورزی پر بھی سزا کا اعلان کیا گیا ہے، آرڈیننس کے تحت ریلیف نہ دینے پر موقع پر سزا ہوگی، آرڈیننس پر عمل نہ کرنے کی صورت دس لاکھ روپے تک جرمانہ ہوگاْ۔

مسودے کے مطابق تمام نجی اسکولزپر 20فیصدفیس کٹوتی لازم قرار دیا ہے ، کوئی نجی اسکول 80فیصد سےزائد فیس وصول نہیں کر سکے گا، نجی اسکولز پابند ہوں گے کہ تمام طلبا کو فیس میں 20فیصد رعایت دیں۔

سندھ حکومت کی جانب سے مسودے میں کہا گیا کہ نجی اسکولزکم کی گئی 20فیصد فیس کسی اورمد میں وصول نہیں کرسکیں گے، کم گئی 20فیصد مکمل معاف ہوگی قسطوں میں وصول نہیں کی جائے گی۔

مسودے میں مزید کہا گیا کہ پانی ،بجلی ،گیس فراہم کرنے والے ادارے صارفین کو ریلیف دینےکےپابند ہوں گے جبکہ سندھ کی حدود میں کام کرنیوالے تمام یوٹیلٹی سروسزکےاداروں پر اطلاق ہوگا۔

مسودے کے مطابق 260 یونٹ تک کےبجلی صارفین سےبل نہیں لیاجائےگا، 261 سے300یونٹ تک کےصارفین بل کا25فیصد ، 351 سے 450یونٹ تک کےصارفین بل کا50فیصد ،451 یازائد یونٹس پرصارف سےبجلی کاپورا بل ادا کریں گے.

ریلیف آرڈیننس کے مسودے میں کہا گیا 155 یونٹ تک کےگیس صارفین سےبل نہیں لیاجائےگا، 200 یونٹ تک کےگیس صارف بل کا25 فیصد ، 300 یونٹ تک کےگیس صارف بل کا50فیصد اور 301 یا زائد یونٹ کےگیس صارف پورابل اداکریں گے۔

اسی طرح 80 گز کےگھروں کوپانی کابل معاف ہوگا، 81 سے160گزکےمکانوں پرپانی کےبل کا25فیصد، 161 سے240گزکےمکانوں پر پانی کا بل 50فیصد معاف ہوگا جبکہ 240 گزسےزائدکےمکانوں سےپانی کاپورابل لیاجائےگا۔

مسودے کے مطابق 800 اسکوائرفٹ والےفلیٹ کوپانی کابل معاف ہوگا، 801 سے1000اسکوائرفٹ تک کےفلیٹ کوپانی کا25فیصد اور 1001 فٹ سے 1200اسکوائر فٹ کےفلیٹ پانی کا 50 فیصد بل دیں گے جبکہ 1201 یازائداسکوائرفٹ کےفلیٹ پرپانی کابل پورا لیا جائے گا۔

سندھ کوروناایمرجنسی ریلیف آرڈیننس کے مسودے میں کہا گیا 50 ہزارماہانہ کرائےپررہنےوالےسےکرایہ نہیں لیاجائےگا جبکہ 50 ہزارسےزائدایک لاکھ روپےتک50فیصدہاؤس رینٹ لیاجائےگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں