The news is by your side.

کراچی میں بلدیاتی الیکشن نہ کرانے کا خط الیکشن کمیشن کو ارسال

کراچی : سندھ کومت نے کراچی اور حیدرآباد میں بلدیاتی الیکشن نہ کرانے کا مراسلہ الیکشن کمیشن کو بھجوا دیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی، حیدرآباد میں بلدیاتی الیکشن نہ کرانے کے خط کی کاپی سامنے آگئی، سندھ حکومت نے الیکشن کمیشن کو مراسلہ ارسال کردیا ہے۔

سندھ حکومت نے کراچی اور حیدرآباد کی حلقہ بندیوں کا نوٹیفکیشن واپس لے لیا اور سیکشن ٹین اے کے تحت بلدیاتی ایکٹ دو ہزار تیرہ واپس کردیا۔

محکمہ بلدیات کے مراسلے کے متن میں کہا گیا ہے کہ کراچی اور حیدرآباد میں پرانی حلقہ بندیوں پر الیکشن نہیں ہوں گے۔

مراسلے میں کہنا ہے کہ کراچی اور حیدرآباد میں کابینہ ذیلی کمیٹی کی منظوری کے بعد ازسرنو حلقہ بندیاں ہوں گی، پندرہ جنوری کو بلدیاتی الیکشن اب ممکن نہیں۔

محکمہ بلدیات نے کہا ہے کہ سندھ کابینہ نے سیکیورٹی صورتحال اور تھریٹ الرٹ پر بھی غور کیا، قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی سیکیورٹی نہ ملنے کے سبب خدشات میں اضافہ ہوا۔

دوسری جانب سندھ حکومت نے الیکشن کمیشن کو دادو میں الیکشن نہ کرانے سے متعلق بھی مراسلہ ارسال کردیا ہے۔

مراسلے میں کہا ہے کہ ضلع دادوکےتعلقہ میہڑ،خیرپورناتھن شاہ میں سیلابی صورتحال ہے، کئی ووٹرزاب بھی اپنے گھروں کو نہیں لوٹ سکے۔

سندھ حکومت کا کہنا ہے کہ دادومیں بلدیاتی الیکشن ممکن نہیں ، دادوکےعوام کوآئینی حق ووٹ سےمحروم نہیں کیاجاسکتا، دادومیں بلدیاتی الیکشن ممکن نہیں۔

یاد رہے گذشتہ روز سندھ حکومت نے صوبے میں بلدیاتی الیکشن کا دوسرا مرحلہ ملتوی کرانے اور لوکل گورنمنٹ ایکٹ میں ترمیم کا فیصلہ کیا تھا ، اور ساتھ میں دادو میں بھی بلدیاتی الیکشن15 جنوری کو نہ کرانے کا فیصلہ کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں