site
stats
انٹرٹینمںٹ

سندھ ہائیکورٹ کا ایان علی کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم

کراچی: سندھ ہائی کورٹ نے ای سی ایل میں نام ڈالنے کا میمورنڈم کالعدم قرار دیتے ہوئے ایان علی کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا۔

ایان علی کا نام پہلے سندھ ہائیکورٹ کے حکم پر ای سی ایل سے نکالا گیا اس کے بعد سپریم کورٹ نے بھی انہیں کلین چٹ دے دی تھی مگر اس کے باوجود وزارت داخلہ کی جانب سے ان کا نام ای سی ایل سے نہیں نکالا گیا تھا جس کے خلاف ایان علی نے توہین عدالت کی درخواست دائر کر رکھی تھی۔

سندھ ہائیکورٹ نے ایان علی کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیتے ہوئے نام شامل کرنے کا میمورنڈم کالعدم قرار دے دیا۔ وفاق کو 7 روز میں اپیل دائر کرنے کی مہلت دے دی گئی ہے۔

ایان علی سے گزشتہ سال مارچ میں بیرون ملک جاتے ہوئے اسلام آباد ایئرپورٹ پر تلاشی کے دوران 5 لاکھ ڈالر برآمد کیے گئے تھے جس کے بعد ملزمہ کو گرفتار کر کے اڈیالہ جیل منتقل کردیا گیا تھا مگر کچھ ماہ بعد انہیں ضمانت پر رہا کردیا گیا تھا۔

ایان علی پر 5 کروڑ روپے جرمانے کے فیصلے پر حکم امتناع برقرار *

ایان علی کیس کے اہم گواہ انسپکٹر اعجاز چوہدری کی بیوہ نے بھی راولپنڈی ہائیکورٹ میں ملزمہ کو شوہر کے قتل میں نامزد کرنے کی درخواست جمع کروا رکھی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top