سندھ ہائیکورٹ نے سیاہ کاری کے تمام مقدمات کی تفصیلات طلب کرلیں -
The news is by your side.

Advertisement

سندھ ہائیکورٹ نے سیاہ کاری کے تمام مقدمات کی تفصیلات طلب کرلیں

کراچی : سندھ ہائی کورٹ سرکٹ بینچ لاڑکانہ میں سیاہ کاری کے مقدمات کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے لاڑکانہ اور سکھر ڈویژنوں کے ڈی آئی جیز اور تمام ایس ایس پیز کو 22 اکتوبر کو گذشتہ دو سالوں کے مقدمات کی تفصیلات عدالت میں پیش کرنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

یہ احکامات اس وقت دیئے گئے جب عدالت نے کندھ کوٹ کی مغوی خاتون نصیبہ کے مقدمے کی سماعت جاری تھی۔

سماعت کے موقع پر درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی کہ اس کی بیٹی نصیبہ کو سیاہ کاری کے جھوٹے الزام میں سابق شوہر گلزار نے اغواء کرلیا ہے جس کی زندگی کو خطرہ ہے۔

عدالت نے پولیس کو حکم دیا کہ نصیبہ کو فوری طور پر بازیاب کرکے عدالت میں پیش کیا جائے۔ اس موقع پر جسٹس صلاح الدین پنہور نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ سندھ میں سرداروں اور وڈیروں نے سیاہ کاری کو کاروبار بنادیا ہے۔

خواتین پر اس قسم کے الزامات لگاکر اپنے ذاتی مفادات حاصل کئے جارہے ہیں، سیاہ کاری کے الزامات میں خواتین کو قید و بند میں رکھا جارہا ہے جبکہ جرگوں میں لگائی جانے والی جرمانے کی رقم سے بھی سردار اپنا حصہ بھی وصول کررہے ہیں۔

عدالت نے ہائی کورٹ کے حکام کو بھی احکامات جاری کئے کہ سیاہ کے مقدمات کا عدالت میں موجود ریکارڈ بھی پیش کیا جائے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں