The news is by your side.

Advertisement

محکمہ بلدیات سندھ میں بڑا جعلی بھرتیوں کا اسکینڈل سامنے آگیا

کراچی : محکمہ بلدیات سندھ میں جعلی دستاویزات اور بغیر اسکروٹنی بھرتیوں کا انکشاف سامنے آیا ، جس میں کہا گیا ہے کہ 2008 سے 2010 یونین کونسلزکےسیکریٹریز کو مبینہ جعلسازی سے بھرتی کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ بلدیات سندھ میں بڑا جعلی بھرتیوں کا اسکینڈل سامنے آگیا ، جس میں جعلی دستاویزات اور بغیر اسکروٹنی بھرتیوں کا انکشاف ہوا ، سیکڑوں افراد کو سیاسی بنیادپر سیکریٹری یونین کونسل بھرتی کیا گیا۔

محکمہ بلدیات سندھ میں جعلی ،خلاف ضابطہ بھرتیوں پر رپورٹ منظر عام پر آگئی ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ 2008 سے 2010 یونین کونسلزکےسیکریٹریز کو مبینہ جعلسازی سے بھرتی کیا گیا ، محکمہ بلدیات سندھ میں 248بغیر اسناد، مشکوک اور جعلی بھرتیوں کی نشاندہی کی گئی ہے۔.

رپورٹ کے مطابق خلاف ضابطہ بھرتیوں کےذریعے 70کروڑ روپے سے زائد کا نقصان پہنچایا گیا، یوسی سیکریٹریز کا تعلق شکارپور،کراچی،قمبر،خیرپور ودیگراضلاع سےہے.

انکوائری کمیٹی نے37صفحات پر مشتمل رپورٹ جمع کرادی ہے ، جس میں بتایا گیا کہ 859یو سی سیکریٹریزمیں سے705نےدستاویزجمع کرائیں جبکہ محکمہ بلدیات کے149یوسی سیکریٹریز کی بھرتی جعلی ہے جبکہ 99یوسی سیکریٹریز کو بغیر اشتہار اور قواعد بھرتی کیا۔

انکوائری کمیٹی کی جعلی بھرتیوں میں ملوث افسران معطل کرنے کی سفارش کردی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں