site
stats
سندھ

اختیارات ختم، چوکیاں خالی، کوئی آپریشن نہیں کرسکتے، سندھ رینجرز

کراچی: سندھ رینجرز نے کہا ہے کہ صوبے میں ہمارے اختیارت ختم ہوچکے، فی الوقت رینجرز کوئی آزادانہ آپریشن نہیں کرسکتی۔ رینجرز نے چوکیاں خالی کرکے اہلکاروں کو واپس بلالیا.


یہ بھی پڑھیں: پنجاب میں رینجرز کی مدت بڑھانے کا فیصلہ


ترجمان رینجرز کی جانب سے کہا گیا ہے کہ پاکستان رینجرز سندھ میں آئین کی شق 147 کے تحت کراچی میں موجود ہے، تلاشی،گرفتاری،آپریشن کے ہمیں حاص اختیارت 15 اپریل کو ختم ہوچکے ہیں، سندھ میں رینجرز اب سندھ حکومت کے ضابطے  کے مطابق آزادانہ کوئی آپریشن نہیں کرسکتی۔

اختیارات میں توسیع کی سمری وزیر اعلی سندھ کے دستخط کی تاحال منتظرہے۔ رینجرز نے چوکیاں خالی کرکے اہلکاروں کو واپس ہیڈ کوارٹرز بلالیا اورشہر بھر میں اسنیپ چیکنگ بھی روک دی گئی ہے۔

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ کسی ایمرجنسی،آپریشن پر پولیس،ضلعی انتظامیہ کو بیک اپ سپورٹ دے سکتے ہیں،اس کے ساتھ ساتھ نوٹی فائیڈ ذمہ داری کے اہم مقامات کی حفاظت ہمار ے فرائض میں شامل ہے۔

محکمہ داخلہ سندھ کے بیان میں کہا گیا ہے کہ رینجرز اپنا کام کررہی ہے۔ دوسری طرف رینجرزکواختیارات نہ دینے جانے پرکراچی تاجراتحاد نے تحفظات کا اظہارکیا ہے گورنر سندھ محمد زبیرکہتے ہیں رینجرز کو دیئے گئے اختیارات سے شہر میں حالات بہتر ہوئے۔

خیال رہے کہ سندھ میں رینجرز کے اختیارات 15 اپریل کو ختم ہوچکے ہیں تاہم سندھ حکومت اور وفاق میں پہلے کی طرح اختلافات زوروں پر ہیں جس کے باعث پہلے کی طرح اب بھی کئی روز گزرنے کے باوجود رینجرز کے اختیارات میں اضافہ کرنے پر اتفاق رائے نہییں ہوسکا ہے۔

دوسری جانب پنجاب میں رینجرز کے قیام کی مدت مزید دو ماہ بڑھانے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے جس کا نوٹی فکیشن 22 اپریل کو جاری ہونے کا امکان ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top