site
stats
پاکستان

سندھ میں سنگین جرائم میں ملوث 16 افراد نے ہتھیار ڈال دیے

سکھر: سنگین جرائم میں ملوث 16 افراد نے اپنے آپ کو سندھ رینجرزکے حوالے کردیا ہے، رینجرز نے قومی دھارے میں آنے والوں کو خوش آمدید کہا.

پاکستان رینجرز(سندھ) کے مطابق سنگین جرائم میں ملوث 16 افراد نے اپنے آپ کو سیکیورٹی اداروں کے حوالے کردیا ہے.

رینجرز کا کہنا ہے کہ قومی دھارے میں آنے والوں کو خوش آمدید کہتے ہیں۔ ہتھیارڈالنے والوں کو سندھی اجرک اورٹوپی پہنائیں گے، ان کی مکمل طور پرقانونی مدد فراہم کی جائے گی.

ترجمان پاکستان رینجرز(سندھ) کا کہنا ہے کہ سنگین جرائم میں ملوث 16 افراد میں شامل محمد اقبال نندوانی، مکھنوں خان نندوانی، سیف دین نندوانی، محمد صدیق، عطا اللہ تیغانی، کہرعلی نندوانی، غلام محمد نندوانی، نور حسن نندوانی، یعقوب نندوانی، جعفرخان نندوانی، میرحسن نندوانی، دوست علی نندوانی، محراب، بشیر احمد، پٹھان اورفضل محمد نے کمشنرلاڑکانہ کے سامنے ہتھیار ڈالے ہیں۔

مزید پڑھیں:لاڑکانہ : طارق سیال اور اسد کھرل کے ساتھی سمیت دس افراد گرفتار

یاد رہے کہ گذشتہ سال سندھ رینجرز نے لاڑکانہ میں‌ کارروائی کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال کے بھائی طارق سیال کے فرنٹ مین اسد کھرل کے قریبی ساتھی عابد بگھیو سمیت دس مشکوک افراد کو حراست میں لیا تھا۔ بعد ازاں اسد کھرل کو عدالت نے ضمانت پر رہا کردیا تھا۔

مزید پڑھیں:اسد کھرل کی دو مقدمات میں ضمانت منظور، جیل سے رہائی

واضح رہے کہ اس سے قبل جب رینجرز نے اسد کھرل کو حراست میں لیا تھا تو بااثرافراد نے اسد کھرل کو رینجرز کی تحویل سے آزاد کرالیا تھا، جس پر رینجرزاورسندھ حکومت کے درمیان معاملات کشیدہ ہوگئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top