The news is by your side.

لیجنڈری گلوکار محمد رفیع کے ساتھی انتقال کرگئے

ممبئی: بالی ووڈ کے لیجنڈری گلوکار محمد رفیع کے ساتھی محمد عزیز گزشتہ روز دل کا دورہ پڑنے کے بعد دنیا فانی سے کوچ کرگئے۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق 64 سالہ پلے بیک سنگر محمد عزیز کو گزشتہ روز دل کی تکلیف محسوس ہوئی جس کے بعد انہیں اہل خانہ ممبئی کے نناوتی اسپتال لے کر پہنچے۔

ڈاکٹرز نے محمد عزیز کو بچانے کی ہر ممکن کوشش کی مگر وہ جانبر نہ ہوسکے۔

بیٹی ثنا عزیز نے والد کے انتقال کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ’ابو کلکتہ سے ممبئی سفر کررہے تھے کہ اسی دوران اُن کو دل کا دورہ پڑا اور ہم انہیں تقریباً دوپہر تین بجے اسپتال لے کر پہنچے‘۔

ثنا کا کہنا تھا کہ والد کے ساتھ ہمیشہ کی طرح اُن کے دوست سفر کررہے تھے جنہوں نے ہمیں بذریعہ ٹیلی فون اطلاع دی کہ ابو کی طبیعت کچھ خراب ہوگئی۔

ڈاکٹرز کے مطابق گلوکار کے دل کی چاروں رگیں بند تھیں جس کی وجہ سے وہ جانبر نہ ہوسکے۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق محمد عزیز گزشتہ ماہ کلکلتہ میں کنسرٹ کر کے واپس ممبئی آرہے تھے کہ انہیں دل کی تکلیف ہوئی جس کے بعد اُن کو اسپتال منتقل کیا گیا۔

گلوکار محمد عزیز نے تیس سال تک بالی ووڈ انڈسٹری کے لیے خدمات انجام دیں، آپ نے لیجنڈری گلوکار محمد رفیع کے ساتھ 1984 میں ریلیز ہونے والی بنگالی فلم ’جیوتی‘ میں ڈیببیو کیا اور پھر انو ملک سمیت دیگر نامور میوزک کمپوزر کے ساتھ بھی کام کیا۔

محمد عزیز نے ترقی کی منازل اُس وقت طے کرنا شروع کیں جب اُن کے دو گانے امیتابھ بچن کی فلم ’مرد‘ میں شامل کیے گئے۔

آپ کے مشہور گانوں میں سے ’مائی نیم از لکھن، لال دوپٹہ مل مل کا، آپ کے آجانے سے، میں تیری محبت میں، دل لے گئی تیری بندیا‘ قابل ذکر ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں