سپاہ صحابہ اور بی ایل اے برطانیہ کی دہشتگرد تنظیموں کی فہرست میں برقرار -
The news is by your side.

Advertisement

سپاہ صحابہ اور بی ایل اے برطانیہ کی دہشتگرد تنظیموں کی فہرست میں برقرار

لندن : حکومت برطانیہ نے اپنی جارہ کردہ سالانہ رپورٹ میں بلوچستان لبریشن آرمی اور سپاہ صحابہ پاکستان کو دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں اس سال بھی شامل کیا ہے، سال 2016 کی سالانہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان میں سرگرم مذہبی جماعت ‘اہل سنت والجماعت’ دراصل کالعدم دہشت گرد تنظیم سپاہ صحابہ کا ہی دوسرا نام ہے۔

حکومتِ برطانیہ کی جانب سے جاری کی گئی اس فہرست کے مطابق سپاہ صحابہ اوراس کا ذیلی گروہ لشکرِجھنگوی ہے۔ یاد رہے کہ سپاہ صحابہ سال 2001 اور بلوچستان ریپبلیکن آرمی سال 2006 سے برطانوی حکومت کی دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں شامل ہیں۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق حکومتِ برطانیہ کی جانب سے جاری کی گئی فہرست میں مبینہ دہشت گرد سرگرمیوں میں ملوث ہونے کی وجہ حقانی نیٹ ورک کو بھی اس فہرست میں شامل کیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق حقانی نیٹ ورک افغانستان میں اپنی دہشت گردانہ کارروائیوں میں غیر ملکیوں کو بھی نشانہ بناتا رہا ہے۔ حقانی نیٹ ورک کو اقوامِ متحدہ اور امریکہ نے سال 2012 جبکہ کینیڈا نے سال 2013 میں دہشت گرد گرہوں کی فہرست میں شامل کیا تھا۔

دہشت گرد تنظیموں کی اس فہرست میں سکھ علیحدگی پسند تنظیم ‘ببر خالصہ’ اور بھارت میں اسلامی ریاست کے قیام کے لیے سرگرم گروہ ‘انڈین مجاہدین’ یا آئی ایم بھی شامل ہیں۔

بی بی سی کے مطابق سال 2016 میں جن تنظیموں یا گروہوں کو برطانوی حکومت کی جانب سے دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں شامل کیا گیا ان میں ‘گلوبل اسلامک میڈیا فرنٹ’ ‘جماعۃ انشورت دولۃ’ ‘مجاہدین انڈونیشیا تیمور’ یا ایم آئی ٹی اور برطانوی نسل پرست گروہ ‘نیشنل ایکشن‘ شامل ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں