The news is by your side.

Advertisement

سینیٹ الیکشن جمہوریت پرداغ ہیں، وزیراعظم چیف جسٹس کی ملاقات غیرمعمولی تھی: سراج الحق

کوئٹہ:امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت عوامی مسائل کے حل میں 100 فیصد ناکام ہوچکی ہے، ہمارے ہاں‌انتخابات میں الیکشن نہیں، سلیکشن ہوتا ہے.

ان خیالات کا اظہار انھوں نے کوئٹہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا. ان کا کہنا تھا کہ آج نوجوان بے روزگارہیں، عام انسان کو انصاف نہیں مل رہا، موجودہ اسٹیٹس کونے عوام کو مایوس کیا ہے.

عوام عدالت عظمیٰ سے پرامید ہے۔ پانامامیں شامل تمام افراد کا احتساب کیا جائے، نیب کے ادارے کو فعال کیا جائے.

سراج الحق امیر جماعت اسلامی

انھوں‌ نے کہا کہ الیکشن قریب آتے ہی حکمران ایک بارپھر سرخی پاؤڈر لگا کر باہرنکل آئے، حکمران ایک بار پھرعوام کو بیوقوف بنانے کے لیے سرگرم ہوگئے.

امیر جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ دینی جماعتوں کواکٹھا کرکے ایم ایم اےکو بحال کیا ہے، ہم عوام کی خدمت کریں گے، موجودہ سیاسی حکمرانوں نے پاکستان کو کرپشن اورمہنگائی کا تحفہ دیا.

سراج الحق کا کہنا تھا کہ عام انتخابات وقت پراورشفاف ہونے چاہییں، الیکشن کمیشن ضمنی الیکشن کی طرح تماشائی نہ بنے، بدقسمتی سے الیکشن کمیشن نےہمیشہ آنکھیں بند کی ہیں.

انھوں نے کہا کہ سینیٹ الیکشن جمہوریت کے منہ پربدنما داغ ہیں. ایوان میں لوگ پیسے دی کر پہنچتے ہیں، پیسے دے کر ایوان میں آنے والے لوگ پھر صرف پیسے بناتے رہتے ہیں.

ان کا کہنا تھا کہ سینیٹ الیکشن میں ہم نے پیپلزپارٹی اورپی ٹی آئی کی طرح کام نہیں کیا، پی ٹی آئی والے پیپلزپارٹی کوووٹ دے کر انھیں گالیاں دے رہے تھے، نظریاتی ایجنڈے کے تحت ن لیگ کوسینیٹ میں ووٹ دیا. ہم نے کچی گولیاں نہیں کھیلیں۔

انھوں نے وزیراعظم اورچیف جسٹس کی ملاقات کو غیرمعمولی قرار دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے ملاقات میں صفائیاں پیش کی ہوں گی، احتساب ادھورا چھوڑا تو سمجھیں گے یہ ملاقات کا نتیجہ ہے،عوام عدالت عظمیٰ سے پرامید ہے۔ پانامامیں شامل تمام افراد کا احتساب کیا جائے، نیب کے ادارے کو فعال کیا جائے.


ادارے ناکام ہورہے ہیں، نئی نسل کے چہروں پر مایوسی ہے، سراج الحق

ہم اقتدارمیں آکرکرپشن کا خاتمہ کریں گے، سراج الحق


Comments

comments

یہ بھی پڑھیں