The news is by your side.

Advertisement

سیاسی جماعتیں اسلامی نظام کے رائج ہونے میں رکاوٹ ہیں: سراج الحق

سپریم کورٹ کو درخواست کی ہے کہ پانامالیکس کے تمام ناموں کا احتساب ہو

لاہور: امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ سیاسی جماعتیں اسلامی نظام کے رائج ہونے میں رکاوٹ ہیں.

تفصیلات کے مطابق سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ اسلامی نظام کی راہ میں‌ سیاسی جماعتیں‌ رکاوٹیں بنیں، ہم ملک سے وی آی پی کلچر کا خاتمہ چاہتے ہیں.

عدالتی فیصلوں میں قرآن اور حدیث کے فیصلے نظرنہیں آئے، ہم چیف جسٹس کے ہاتھ میں قرآنی فیصلے چاہتے ہیں

سراج الحق امیر جماعت اسلامی

سراج الحق نے کہا کہ 70 سال گزر گے، پاکستان میں اسلامی نظام رائج نہ ہو سکا، 111 دن عدالتی نظام کا مشاہدہ کیا، عدالتی فیصلوں میں قرآن اور حدیث کے فیصلے نظرنہیں آئے، ہم چیف جسٹس کے ہاتھ میں قرآنی فیصلے چاہتے ہیں.

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ مظلوم کو انصاف کی فراہمی چاہتے ہیں، خواہش ہے کہ ہماری عدالتوں میں طاقتور کمزور نظر آئیں، ہم عوام کے چہرے پر خوشیاں اور سکون چاہتے ہیں، کسان کو اس کی محنت کا صلہ ملے، عوام ترقی کریں.

ان کا کہنا تھا کہ رمضان کریم کا پیغام اللہ کو راضی کرنا ہے، رمضان کا مہینہ قرآن کا مہینہ ہے، قرآن ہماری زندگی گزارنے کا چارٹر ہے.

ان کا کہنا تھا کہ اسلامی نظام رائج کرنے کے لیے سیاسی جماعتوں‌ کو کردار ادا کرنا ہوگا، وی آئی پی کلچر ختم ہو، سپریم کورٹ کو درخواست کی ہے کہ پانامالیکس کے تمام ناموں کا احتساب ہو۔

انھوں نے کہا کہ رمضان کا مہینہ جہاد کامہینہ ہے، قوم آئندہ انتخابات میں اسلامی نظام کو ووٹ دے.


یہود وہنود اور امریکا کا اتحاد مسلمانوں کے خلاف متحد ہوچکا ہے: سراج الحق


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں