باریاں لگانے والی اشرافیہ نے نظام مصطفیٰ کا نفاذ نہیں ہونے دیا، سراج الحق siraj-ul-haq
The news is by your side.

Advertisement

باریاں لگانے والوں‌ نے نظام مصطفیٰ کا نفاذ نہیں ہونے دیا، سراج الحق

لوئردیر: امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ ملک میں اشرافیہ نے حکومت کرنے کے لیے باریاں لگا رکھی ہیں جس کی وجہ سے 70 سال بعد بھی پاکستان میں نظام مصطفیٰ نافذ نہیں ہوسکا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے چکدرہ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ آزادی کو بیتے 70 سال گزر چکے ہیں لیکن اب تک اسلام کے نام پر قائم ہونے والے اس ملک میں نظامِ مصطفیٰ نافذ نہیں ہوسکا ہے جس کی وجہ سے کرپشن عام اور قتل و غارت گری جاری و ساری ہے۔

انہوں نے کہا کہ 70 سال سے ملک پر قابض اشرافیہ نے اپنی جیبیں بھریں، جائیدادیں بنائیں اور بیرون ملک منتقل کیں لیکن عوام کوغربت اور بے روزگاری کا تحفہ دیا حد تو یہ ہے کہ غریب کو پینے کا صاف پانی بھی میسر نہیں ہے، علاج کی سہولیات ناپید ہیں اور لوگ خود کشی کر رہے ہیں۔

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا کہ ملک کے گھمبیر مسائل کا حل اسلامی انقلاب میں ہے جس میں نظام مصطفیٰ کے نفاذ ہوگا اور ملک کو صاف ستھری، شفاف اور صالح قیادت نصیب ہو گی جو ملک کا نقشہ بدلنے کی پوری صلاحیت رکھتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کرپشن کے خلاف سب سے پہلے آواز جماعت اسلامی نے اُٹھاتے ہوئے اس جنگ کو گلی گلی سے ہوتے ہوئے عدالت تک پہنچایا اور کرپشن کے خلاف ہمارا یہ جہاد جاری رہے گا میں خون کے آخری قطرے تک ملک کی حفاظت کروں گا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں