The news is by your side.

Advertisement

ایم ایم اے انتخابی اتحاد ہے، دیگر سیاسی جماعتوں کو بھی شامل کریں گے، سراج الحق

لاہور : امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ متحدہ مجلس عمل بحال ہو چکی ہے اور یہ اتحاد الیکشن کے لیے ہے جس میں دیگر سیاسی جماعتوں کو بھی شامل کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں.

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کارکنان کے ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر امیر جماعت سے اپنے سابقہ مطالبات دہراتے ہوئے کہا کہ پاناما پیپرز میں شامل تمام افراد کا ٹرائل کیا جائے، انتخابات وقت پر کرائے جائیں تاہم کرپٹ سیاست دانوں کو الیکشن میں حصہ لینے سے روکنے کے لیے قانون سازی کی جائے.

انہوں نے مزید کہا کہ کار حکومت کس نااہلی سے چلایا جا رہا ہے اس کی مثال سانحہ ماڈل ٹاؤن ہے جہاں 14 افراد کو جن میں بزرگ، بچے اور خواتین بھی شامل تھے موت کے گھاٹ اتار دیا گیا اور قاتلوں کو ٹی وی پر براہ راست دیکھا گیا لیکن پھر بھی انصاف نہیں ملا اور انصاف کیسے ملتا کہ قاتل حکومتی صفوں میں سے ہیں.

امیر جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ نوازشریف وکیلوں کو پیسے دے دے کر کر تھک جانے کا گلہ کررہے ہیں جب کہ خود تیس برسوں سے حکومت کر رہے ہیں اور انصاف کی سہولتوں کے فقدان کا رونا بھی رو رہے ہیں جس کے ذمہ دار وہ خود ہیں اسی طرح اسکولوں میں تعلیم اور اسپتالوں میں علاج نہ ہونے کے ذمہ دار بھی اُن کی حکومت ہی ہے.

سراج الحق نے سندھ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ عجیب حکومت ہے جو امور مملکت بھی چلارہی ہے اور احتجاج بھی کررہی ہے، صوبائی حکومت کی ناقص کارکردگی کے باعث سندھ کے عوام نے بہت زیادہ تکالیف برداشت کی ہیں تاہم اگر ایم ایم اے کی حکومت بنتی ہے تو سندھ کے مسائل کے ازالہ پہلی ترجیح ہوگا.


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں