The news is by your side.

Advertisement

عدالت کا فیصلہ مسترد، کشمیری رہنما نے گائے ذبح کرڈالی

سری نگر : کشمیری رہنما آسیہ اندرابی نے ہائیکورٹ کے گائے ذبح کرنے پر پابندی کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے اپنی موجودگی میں گائے ذبح کروائی۔

تفصیلات کے مطابق حریت رہنما آسیہ اندرابی نے مقبوضہ کشمیر میں گائے کے ذبح کرنے پر پابندی کا  عدالتی حکم ہوا میں اڑا دیا، بچپورہ میں اپنی رہائش گاہ پر گائے ذبح کروا ڈالی۔

اس حوالے سے ایک وڈیوبھی جاری کی گئی ہے جس میں ہندو جارحیت کے ظلم کیخلاف آسیہ انداربی نے ہندو رہنماؤں کو للکارا ہے کہ کسی صورت مسلمانوں کے حقوق کی خلاف ورزی نہیں ہونے دینگے۔

گائے ذبح کرنا مسلمانوں کا اہم فریضہ ہے اور اسے کشمیر میں رہنے والا ہر مسلمان پور اکرے گا۔ گزشتہ روز مقبوضہ جموں و کشمیر ہائی کورٹ نے ریاست میں گائے کے گوشت کی فروخت اور کاٹنے پر فوری پابندی عائد کرنے کا حکم جاری کیا تھا۔

عدالت نے اس سلسلے میں ڈائریکٹر جنرل پولیس کو ہدایت کی ہے کہ ر یاست بھر کے تمام پولیس حکام اور بالخصوص ضلعی سربراہان اور تھانوں کے ایس ایچ اوز کو ہدایات جاری کرکے اس پر سختی سے عملدرآمد یقینی بنایا جائے۔

مقبوضہ جموں و کشمیر ہائی کورٹ نے اپنے فیصلے میں بتایاکہ خلاف ورزی میں ملوث افراد کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے گی۔

دوسری جانب کشمیری رہنماؤں سید علی گیلانی میر واعظ عمر فاروق، یاسین ملک نے وادی میں کل کورٹ کے حکم کے خلاف ہڑتال کا اعلان کیا ہے جبکہ آج نماز جمعہ کے بعد بھی احتجاجی ریلیاں نکالی جائیں گی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں