اے این پی کی سینیٹر ستارہ ایاز کو گرفتار نہ کرنے کا عدالتی حکم -
The news is by your side.

Advertisement

اے این پی کی سینیٹر ستارہ ایاز کو گرفتار نہ کرنے کا عدالتی حکم

پشاور : عدالت نے کے پی کے احتساب کمیشن کو اے این پی کی سینیٹر ستارہ ایاز کو گرفتار کرنے سے منع کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پشاور ہائیکورٹ نے خیبرپختونخوا احتساب کمیشن کو عوامی نیشنل پارٹی کی سینیٹراور سابق صوبائی وزیر ستارہ ایاز کی گرفتاری سے روک دیا ہے۔

پشاور ہائیکورٹ نے صوبائی احتساب کمیشن میں وومن سیل نہ ہونے پر احتساب کمیشن کو ستارہ ایاز کی گرفتاری سے 28 اکتوبر تک روک دیا ہے جبکہ 28 اکتوبر کو نیب اور صوبائی احتساب کمیشن سے رپورٹ بھی طلب کرلی ہے۔

سینیٹر ستارہ ایاز نے احتساب کمیشن کی جانب سے جاری کئے گئے وارنٹ گرفتار ی کیخلاف پشاور ہائیکورٹ میں کیس دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کہ نیب ان کیخلاف کارروائی مکمل کرچکا ہے جبکہ احتساب کمیشن میرے خلاف کرپشن کا کوئی ریکارڈ نہ ہونے کے باوجود اب دوبارہ سے کارروائی کررہا ہے۔

انہوں نے مؤقف اختیار کیا کہ صوبائی حکومت احتساب کے نام پر سیاسی انتقام لے رہی ہے ، پشاور ہائیکورٹ کی جانب سےجسٹس مسز ارشاد قیصر اور افسر شاہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ کرپشن کے ثبوت پیش کرنے سے قبل گرفتاری بلا جواز ہے۔

عدالت نے نیب اور احتساب کمیشن دونوں سے رپورٹ طلب کرلی ہے، عدالت نے کیس کی سماعت ایک ہفتے تک ملتوی کردی۔

واضح رہے کہ اے این پی کی رہنما اور سینیٹر ستارہ ایاز پرکروڑوں روپے کی کرپشن کا الزام ہے اور ستارہ ایاز کی گرفتاری کیلئے خیبر پختونخواہ کا احتساب کمیشن اسلام آباد پہنچ گیاتھا لیکن انہوں نے پارلیمنٹ لاجز میں پناہ لے لی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں