The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ: نیوکاسل اسلامک سینٹر پر حملہ، توڑ پھوڑ کے بعد آگ لگانے کی کوشش

لندن: برطانیہ میں نسل پرستی اور مسلمانوں سے نفرت کا کھل کر اظہار کیا جانے لگا، مشتعل نوجوانوں نےنیوکاسل اسلامک سینٹر پر حملہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی شہر نیوکاسل میں قائم نیوکاسل اسلامک سینٹر پر مذہبی نفرت کا اظہار کرتے ہوئے مشتعل نوجوانوں نے حملہ کردیا، سینٹر میں توڑ پھوڑ کے بعد آگ لگانے کی بھی کوشش کی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ نیوکاسل اسلامک سینٹر پر حملے کے الزام میں چھے مشتبہ نوجوان گرفتار کرلیے گئے، حملہ آوروں نے دیوار پر مسلمانوں کے خلاف نعرے لکھے۔

پولیس نے واقعے کو نسلی نفرت پر مبنی حملہ قرار دیا ہے، نیوکاسل اسلامک سینٹر پر دو ماہ میں دوسری بار حملہ کیا گیا ہے، لیکن حملہ آور گرفتار نہ ہوسکے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ حملے میں ملوث ہونے کے شبہے میں 6 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے جن میں دو عورتیں بھی شامل ہیں، تفتیش جاری ہے جلد حملے کی وجہ سامنے آئے گی۔

ابتدائی طور پر اس حملے کو مذہبی تعصب قرار دیا گیا ہے، تاہم حتمی نتیجہ حملے کے محرکات اور تحقیقات کے بعد ہی اخذ کیا جاسکے گا۔

برطانیہ،یورپی ممالک اور امریکا سمیت دنیا بھر میں مسلمانوں کے خلاف نفرت کا کھل کر اظہار سامنے آرہا ہے، یہ واقعہ نیا نہیں اس سے قبل بھی متعدد بار اسی نوعیت کے حملے ہوچکے ہیں۔

مسلماںوں کیخلاف زہر افشانی پر نوجوان نے آسٹریلین سینیٹر کو انڈا دے مارا

خیال رہے کہ مارچ 2017 میں امریکی ریاست کولوراڈو میں مسجد اور اسلامک سینٹر پر حملہ کیا گیا تھا بعد ازاں حملہ آور قانون کی گرفت میں آگیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں