The news is by your side.

Advertisement

شاہ محمود قریشی کی بحرین کے وزیر خارجہ سے ملاقات، کشمیر کا معاملہ اٹھایا

نیویارک: وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بحرین کے ہم منصب سے ملاقات کر کے کشمیر میں جاری بھارتی مظالم کا پردہ چاک کردیا۔

تفصیلات کے مطابق شاہ محمودقریشی کی بحرین کےوزیرخارجہ شیخ خالدبن احمدبن محمدالخلیفہ سےملاقات ہوئی جس میں کشمیر میں جاری انسانی حقوق خلاف ورزیوں سمیت باہمی دلچسپی کےامور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

شاہ محمودقریشی نےبحرین کےوزیرخارجہ کو بتایا کہ پاکستان بحرین کے ساتھ بھائی چارگی کے تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔ وفاقی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ بحرین میں  پاکستانیوں کی بڑی تعداداقتصادی ترقی میں  کرداراداکر رہی ہے۔

انہوں نے مقبوضہ وادی میں ہونے والے بھارتی مظالم کا پردہ چاک کرتے ہوئے بحرین کے ہم منصب کو آگاہ کیا کہ  کشمیر میں صورتحال انتہائی تشویشناک ہے، وہاں آج  کرفیوکو 53 روز بیت گئے، عوام کو جان بچانے والی ادویات اورخوراک تک میسرنہیں ہے۔

شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں9لاکھ فوج تعینات کررکھی ہے، نوجوانوں،بچوں کوگھروں سےاغواکرکےبدترین تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے، بھارت کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کر کے آبادیاتی تناسب تبدیل کرنا چاہتا ہے۔

پاکستانی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ 5اگست کےبھارتی اقدام کوپاکستان اورکشمیر کے عوام نےمسترد کردیا، بھارت میں بھی آرٹیکل کے خاتمے پر واضح اختلاف رائےسامنےآیا۔ شاہ محمود قریشی نے مطالبہ کیا کہ بحرین کشمیریوں کوبھارتی استبدادسےنجات دلانےمیں کرداراداکرے۔ بحرین کے وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ  وزیر اعظم عمران خان کےدورہ بحرین کےمنتظرہیں۔

اس موقع پر شاہ محمود قریشی نے جنیوا ہیومن رائٹس کونسل کے مشترکہ بیانیہ کی حمایت پر بحرین کاشکریہ ادا کیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں