The news is by your side.

Advertisement

ملک کے بالائی علاقوں میں شدید برفباری، شاہراہیں ٹریفک کے لیے بند

چلاس / مانسہرہ: گلگت بلتستان اور خیبرپختونخواہ کے پہاڑی علاقوں میں موسم سرما کی پہلی برفباری کے بعد سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا، انتظامیہ نے پھسلن کی وجہ سے اہم شاہراؤں پر آمد و رفت بھی بند کردی۔

محکمہ موسمیات کے مطابق دیامر کے بالائی علاقوں میں وقفے وقفے سے برفباری کا سلسلہ جاری ہے، پہاڑی علاقوں میں ہونے والی برفباری سے بابوسر ٹاپ، بھٹوگاہ ٹاپ، نانگا پربت ، ناران شاہراہ کو ٹریفک کے لیے بند کردیا گیا۔

علاوہ ازیں شہر اور اس کے گردونواح میں بونداباندی کے بعد موسم ابرآلود ہے جس کے باعث سری میں مزید اضافہ ہوگیا، ضلعی انتظامیہ کی جانب سے بابوسر شاہراہ نیشنل ہائی وے پر ٹریفک کی آمدورفت مکمل بند کردی گئی۔ اس کے علاوہ استور کے مضافاتی علاقے دوسائی کے مقام پر بھی برفباری کے باعث رابطہ سڑکیں متاثر ہوئیں۔

محکمہ موسمیات کے مطابق بالائی علاقوں میں بارش اور برفباری کا سلسلہ مزید تین دن تک جاری رہنے کا امکان ہے، ڈی سی دیامر نے لوگوں کو نقل مکانی کی ہدایات جاری کردی۔

مانسہرہ میں برفباری کی وجہ سے بابوسرٹاپ ٹریفک کیلئے بند کردیا گیا، ترجمان نیشنل ہائی وے اتھارٹی (این ایچ اے ) کے مطابق بابوسر ٹاپ پر اب تک8انچ برف پڑچکی ہے، جس کے باعث گلگت کیلئے آمدورفت بند ہوگئی ہے۔

مزید پڑھیں : لاہور سمیت پنجاب کے مختلف علاقوں میں بارش

یاد رہے کہ دو روز قبل محمکہ موسمیات نے پیش گوئی کی تھی کہ کراچی میں اس سال کڑاکے کی سردی پڑے گی اورنومبر کے وسط تک موسم سرد ہونے کا امکان ہے۔

محکمہ موسمیات کا کہنا تھا کہ شمال مغرب کی جانب ہوا کا زیادہ دباؤ موجود ہے اور ہوا کا زیادہ دباؤ یعنی پریشر گریڈینٹ اچھی سردیوں کے لیے موزوں ہے، پریشر گریڈینٹ شمالی بلوچستان میں موجود ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں