The news is by your side.

Advertisement

ماں کو قتل کرنے اور اس کا گوشت کھانے والا بیٹا اپنے انجام کو پہنچ گیا

میڈرڈ : ہسپانوی عدالت نے ماں کو قتل کرنے اور اس کا گوشٹ کھانے اور کتے کو کھلانے کے جرم میں سفاک بیٹے کو 15 سال سے زائد قید کی سزا سنا دی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق یورپی ملک اسپین میں ناخلف بیٹے نے سگی ماں کو قتل کرکے سفاکیت کی انتہا کردی، ایلبرٹ نامی شخص نے اپنی عمر رسیدہ ماں کو گلا گھونٹ کر قتل کیا اور پھر قتل کے نشانات مٹانے کےلیے اس کا گوشت بھی کھاگیا۔

مجرم نے اپنی 69 سالہ ماں کو گلا دبا کر قتل کیا، پھر آری اور چھری کی مدد سے اس کے ٹکڑے کرکے 15 دن تک ماں کا گوشت کھاتا رہا اور اپنے کتے کو بھی کھلاتا رہا جب کہ کچھ ٹکڑے پلاسٹک کے ڈبوں میں کرکے فریج میں محفوظ کرلیے اور باقی کوڑے دان میں پھینک دئیے۔

عدالت نے ماں کو قتل کرنے کے جرم میں بیٹے کو 15 سال قید اور لاش کی بے حرمتی کرنے پر 5 ماہ قید سزا سنائی ہے۔

مقتول کا ناخلف بیٹا ایلبرٹ اپنے کتے کے ہمراہ

عدالت نے کہا کہ مجرم دل دہلا دینے والی واردات کے وقت اپنے ہوش و حواس میں تھا اسی لیے اسے جیل کی سزا کاٹنا ہوگی۔

پولیس نے ایلبرٹ نامی شخص کو 23 فروری 2019 کو اس وقت شک کی بنا پر گرفتار کیا گیا تھا جب پولیس نے مقتول کی سہیلی کے کہنے پر اپارٹمنٹ کا دورہ کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں