The news is by your side.

Advertisement

جنوبی افریقہ میں قیامت صغریٰ : سیکڑوں افراد لقمہ اجل بن گئے

کیپ ٹاؤن : جنوبی افریقہ میں بارش اور سیلاب کی تباہ کاریوں کی وجہ سے پانچویں روز بھی پانی اور بجلی کی سپلائی نہیں ہوسکی، اب تک سینکڑوں افراد ہلاک اور ہزاروں بے گھر ہوچکے ہیں۔

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق جنوبی افریقہ میں سیلاب کی سنگین صورتحال کے پیش نظر حکام نے ڈربن شہر کو آفت زدہ علاقہ قرار دے دیا، جہاں اب تک سینکڑوں اموات ہوچکی ہیں۔

KZN Floods: South Africa Declares Disaster After More Than 300 Die -  Bloomberg

مقامی میڈیا نے پہلے 306 افراد کی ہلاکت کی اطلاع دی تھی جس میں اب ہوشربا اضافہ ہوگیا ہے۔ جنوبی افریقہ کے ڈربن شہر اور مشرقی صوبہ کوازولو نتال میں شدید بارشوں اور سیلاب کے بعد مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 341ہوگئی ہے۔

جنوبی افریقہ میں مذکورہ صوبے کے سربراہ شیلے زکلالہ نے اعلان کیا ہے کہ قدرتی آفت سے اب تک 40,ہزار سے زائد افراد متاثر ہوئے ہیں۔

Heavy Floods and Mudslides Leave at Least 45 Dead in South Africa - The New  York Times

پورا علاقہ پیر کی رات سے شدید بارشوں کی زد میں ہے اور سیلاب نے سڑکوں اور بنیادی ڈھانچے کو تباہ کردیا ہے۔ مبینہ طور پر ایتھکوینی کی میونسپلٹی اور ڈربن شہر کو سب سے زیادہ نقصان پہنچا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں