site
stats
عالمی خبریں

جنوبی کوریا کی صدر عہدے سے برطرف

سیول : جنوبی کوریا کی آئینی عدالت نے صدر پارک گن کے خلاف فیصلہ سناتے ہوئے انہیں عہدے سےبرطرف کردیا۔

تفصیلات کےمطابق سپریم کورٹ کے آئینی بینچ کے آٹھ ججوں نے صدر پارک کو برطرف کرنے سے قبل پارلیمنٹ کی جانب سے ان کے مواخذے کے عمل پرسماعت کی۔

عدالت نےریماکس دیے کہ صدر پارک نے خفیہ سرکاری معلومات کو راز رکھنے کے قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے کئی اہم دستاویزات کو لیک کیا اور اپنی دوست چوئی کو حکومتی معاملات میں مداخلت کی اجازت دے کر قانون کی خلاف ورزی کی۔

s1

چیف جسٹس لی جنگ می نے اپنے فیصلے میں کہا کہ پارک گن کے اس اقدام نےجمہوریت کی روح اور قانون کی حکمرانی کو سنگین طور پر طور پر چوٹ پہنچائی ہے اس لیے انہیں عہدے سے برطرف کیاجاتاہے

خیال رہےکہ عدالتی فیصلےکےبعد صدر پارک گن استثنیٰ سے بھی محروم ہوچکی ہیں جو بطور صدر ان کو حاصل ہوتا ہے اور اب ان پر بدعنوانی کے خلاف مقدمہ بھی چلایا جا سکتا ہے۔

s2

یاد رہےکہ پارک گن کی سہیلی چوئی سون سل دھوکہ دہی اور طاقت کے ناجائز استعمال کےالزامات میں زیر حراست ہیں۔ان پر جنوبی کوریا کی کمپنیوں سے بھی بھاری رقم بٹورنے کے الزامات ہیں۔

واضح رہےکہ پارک گن کو صدارت کے عہدے سے برطرف کرنےکےبعدجنوبی کوریا کو آئندہ مئی تک ایک نئے صدر کو منتخب کرنا ہوگا۔

s3

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top