The news is by your side.

Advertisement

لنک روڈ زیادتی کیس : مرکزی ملزم عابد ملہی کو کس طرح گرفتار کیا گیا؟

لاہور : ایس پی سی آئی اے عاصم افتخار نے لنک روڈ زیادتی کیس کے مرکزی ملزم کی گرفتاری سے متعلق کہا کہ عابد ملہی کو خلیل نامی اے ایس آئی اور ساتھیوں نے گرفتار کیا، عابد ملہی والد کے کپڑے لینے گیا تو اے ایس آئی نے دبوچ لیا۔

تفصیلات کے مطابق ایس پی سی آئی اے عاصم افتخار نے لنک روڈ زیادتی کیس کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا عابدملہی کوخلیل نامی اےایس آئی اورساتھیوں نے گرفتار کیا، عابد ملہی نے فیصل آباد سے رشتے دار کا موبائل چوری کیا اور نام دیوارپرلکھ کرفرارہوا۔

ایس پی سی آئی اے کا کہنا تھا کہ عابد ملہی نے والد سے رابطہ کیا اور بتایا کہ وہ آپ سے ملنا چاہتا ہے ، عابد ملہی کے والدین پولیس حراست میں تھے ، پولیس نےملزم کوٹریپ کرنے کے لیےگھر کےقریب کرائے پرمکان لےرکھا تھا۔

عاصم افتخار نے بتایا کہ عابد ملہی مانگا منڈی پہنچا اور رات چری کے کھیتوں میں رہا ، صبح عابد ملہی نےعقب سےوالد کو آواز دی کہ مجھے کپڑے چاہییں، والد عابد ملہی کے کپڑے لیکر باہر آیا تو اے ایس آئی نے دبوچ لیا۔

ان کا کہنا تھا کہ سی آئی اے پولیس اہلکار علاقے میں پھل کی ریڑھیاں لگا کر بیٹھے رہے، علاقے کے بااثر خالد بٹ نےعابد ملہی کو رضاکارانہ پیش نہیں کرایا تاہم گرفتاری کے بعد رابطہ کرکے خالد بٹ سے کہا لے جانے کے لیے گاڑی چاہیے، خالد بٹ اپنی گاڑی میں لیکر سی آئی اے ماڈل ٹاون آیا۔

ایس پی سی آئی اے نے بتایا کہ عابد ملہی اس سے پہلے شیخوپورہ اور بہاولپور میں بھی دوران ڈکیتی ریپ کر چکا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں