The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ کشمیر پر خصوصی کمیٹی کا پہلا اجلاس

اسلام آباد: مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر وزیر اعظم عمران خان کی قائم کردہ خصوصی کمیٹی کا پہلا ان کیمرہ اجلاس ہوا، اجلاس میں مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورتحال پر گفتگو کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر خصوصی کمیٹی کا پہلا ان کیمرہ اجلاس ہوا جس کی صدارت وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کی، اجلاس دفتر خارجہ میں ہوا۔

اجلاس میں انٹیلی جنس ایجنسی آئی ایس آئی کے ڈائریکٹر جنرل، پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے ڈائریکٹر جنرل، ڈی جی ملٹری آپریشنز، وزیر قانون فروغ نسیم، معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان، پارلیمانی کمیٹی برائے کشمیر کے چیئرمین، اٹارنی جنرل، صدر و وزیر اعظم آزاد کشمیر اور گورنر گلگت بلتستان شریک ہوئے۔

اجلاس میں مقبوضہ کشمیر کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا، پاکستان کی جانب سے عالمی سطح پر اقدامات میں پیشرفت پر بات چیت ہوئی جبکہ بھارتی حکومت کے حالیہ اقدامات اور لائن آف کنٹرول کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔

اجلاس کو بھارتی فوج کی ایل او سی پر جاری خلاف ورزیوں اور مقبوضہ کشمیر کی آئینی حیثیت کی تبدیلی پر عالمی قانونی پہلوؤں پر بریفنگ دی گئی۔ وزیر خارجہ نے سفارتی کوششوں اور سلامتی کونسل اجلاس پر شرکا کو اعتماد میں لیا۔ اجلاس میں بھارتی غیر قانونی اقدام اور خطے میں امن کی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

اجلاس میں بھارت کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں، مقبوضہ کشمیر پر سیکیورٹی کونسل کے اجلاس اور ثمرات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس سے قبل وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان نے اقوام متحدہ میں کشمیر کا مقدمہ بہترین انداز میں پیش کیا، دنیا کشمیر کے معاملے پر پاکستان کا مؤقف سن اور سمجھ رہی ہے، کشمیر پر پاکستان سفارتی محاذ پر درست سمت میں آگے بڑھا ہے۔

انہوں نے کہا تھا کہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر سلامتی کونسل اجلاس کا خیر مقدم کرتا ہوں، 50 سال میں پہلی بار دنیا کے بڑے سفارتی فورم پر مسئلہ کشمیر اٹھایا گیا۔ اقوام متحدہ کی 11 قراردادوں میں کشمیریوں کے حق خود ارادیت کا عزم کیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں