The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: فضائی پابندی کے شکار غیرملکی ملازمین کیلئے خصوصی رعایت

سعودی حکومت کی جانب سے دی جانے والی خصوصی رعایت صرف فضائی پابندی کے شکار ممالک میں موجود غیرملکیوں کے لیے ہے دیگر تارکین وطن اس سے فائدہ نہیں اٹھا سکتے۔

سعودی عرب کی شاہی رعایت کے تحت ایسے غیرملکی جو سفری پابندی کے باعث مملکت نہیں آسکتے ان کے اقامے اور خروج وعودہ کی مدت میں 31 جولائی تک مفت آن لائن توسیع کی جارہی ہے لیکن ایسے تارکین وطن جن کے ممالک پر فضائی پابندی نہیں وہ اس سہولت سے فائدہ نہیں اٹھاسکیں گے۔

سعودی محکمہ پاسپورٹ وامیگریشن(جوازات) نے اسی ضمن میں ایک وضاحت جاری کی ہے۔ جوازات سے سوال کیا گیا تھا کہ میرا فیملی ڈرائیور چھٹی پر گیا ہوا ہے، اس کا اقامہ ایکسپائر ہونے میں ایک ماہ سے کم مدت باقی ہے کیا خروج وعودہ کی مدت میں ایک ماہ کی توسیع ممکن ہے؟۔

محکمہ نے دوٹوک جواب دیا کہ ایگزٹ ری انٹری کی مدت میں توسیع اس صورت میں ہوسکتی ہے کہ جب اقامے کی معیاد ختم ہونے میں کم از کم 90 دن باقی ہوں، بصورت دیگر ممکن نہیں ہے۔

سعودی عرب: غیرملکیوں کو جواب مل گیا!

خیال رہے کہ مذکورہ شہری شاہی رعایت سے مستفید نہیں ہوسکتا کیوں کہ یہ اس ملک سے تعلق رکھتا ہے جہاں پر سعودی حکومت نے سفری پابندی عائد نہیں کررکھی ہے۔

قبل ازیں جوازات کے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر تارکین وطن کی جانب سے سوال پوچھا گیا تھا کہ پاسپورٹ ایکسپائر ہونے کی صورت میں کفالت کی تبدیلی ممکن ہے؟۔

محکمہ پاسپورٹ نے جواب دیا کہ کفالت(اسپانسر شپ) کی تبدیلی کے لیے لازمی ہے کہ پاسپورٹ کارآمد ہو، ایکسپائر پاسپورٹ کی صورت میں کفالت کی تبدیلی یا دیگر امور کی انجام دہی ممکن نہیں ہوسکتی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں