The news is by your side.

Advertisement

زینب قتل کیس: ترجمان سپریم کورٹ کی احمد رضا قصوری کے دعوے کی تردید

اسلام آباد: ترجمان سپریم کورٹ نے زینب کے قاتل کی گرفتاری سے متعلق احمد رضا قصوری کے دعوے کی تردید کردی۔

یاد رہے کہ سینئر وکیل احمد رضا قصوری نے میڈیا میں‌ یہ دعویٰ کیا تھا کہ آج چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثار سے ہونے والی ملاقات میں‌ چیف جسٹس نے انھیں‌ قاتل کی گرفتاری کی خبر دی تھی، انھوں‌ نے یہ دعویٰ بھی کیا تھا کہ قاتل کوئی قریبی رشتے دار ہے۔

البتہ چیف جسٹس کے ترجمان نے اس دعویٰ کی تردید کی ہے، ان کا کہنا ہے کہ چیف جسٹس نے ملزم کی گرفتاری کی کوئی بات نہیں کی، ترجمان کے مطابق چیف جسٹس نے سوشل میڈیا پر چلنے والی خبروں‌ سے متعلق بات کی تھی۔

ننھی زینب کا قاتل گرفتار کر لیا گیا: احمد رضا قصوری کا دعویٰ

ترجمان کے مطابق احمد رضا قصوری نے چیف جسٹس کی بات سیاق وسباق سے ہٹ کر پیش کی، یاد رہے کہ احمد رضا قصوری نے زینب کے قاتل کی گرفتاری کادعویٰ کیا تھا۔

احمد رضا قصوری کا کہنا تھا کہ آج ان کی سہ پہر پونے تین بجے چیف جسٹس آف پاکستان سے ان کے چیمبر میں‌ ملاقات ہوئی تھی، وہ قصور کے بزرگ شہری کی حیثیت سے از خود نوٹس پر ان کا شکریہ ادا کرنے گئے تھے۔ اس موقع پر انھیں‌ چیف جسٹس نے بتایا کہ قاتل کی گرفتاری کی خبر موصول ہوئی ہے۔

زینب کے والد کا جے آئی ٹی کا سربراہ تبدیل کرنے کا مطالبہ

یاد رہے کہ چند روز قبل اغوا ہونے والی ننھی زینب کو درندوں نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کیا کردیا تھا، سات سالہ بچی زینب کو گذشتہ روز آہوں اور سسکیوں کے ساتھ سپرد خاک کیا گیا، زینب کی نمازجنازہ علامہ طاہرالقادری نے پڑھائی تھی۔

 


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں