site
stats
کھیل

اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل: ناصر جمشید لندن میں گرفتار

لندن : اسپاٹ فکسنگ کے معاملے پر برطانوی پولیس نے 2 افراد کو گرفتار کرلیا، بعد ازاں دونوں افراد کو اپریل تک ضمانت پر رہا کردیا گیا، چیئرمین پی سی بی کا کہنا ہے کہ سنا ہے ناصر جمشید کو اور یوسف کو گرفتار کیا گیا۔

برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق لندن میں دو افراد کو اسپاٹ فکسنگ کیس میں حراست میں لے لیا گیا، زیر حراست دونوں افراد کی عمریں تقریبا ً30 سال ہیں، کارروائی برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی نے کی، خبر کے مطابق دونوں افراد کو اپریل تک ضمانت پر رہا کردیا گیا ہے۔

نیشنل کرائم ایجنسی نے کہا ہے کہ مذکوہ کھلاڑیوں سے مزید تفتیش کے معاملے میں پاکستان کرکٹ بورڈ اورآئی سی سی کے اینٹی کرپشن یونٹ کے ساتھ مل کر کام کررہے ہیں۔

اے آر وائی نیوز سے بات کرتے ہوئے چیئرمین پی سی بی شہریار خان نے کہا ہے کہ سنا ہے کہ اسپاٹ فکسنگ کے الزام میں لندن سے ناصر جمشید اور یوسف کو گرفتار کرلیا گیا ہے،ناصر جمشید کے خلاف پی سی بی نے پہلے ہی ایکشن لے کر انہیں معطل کردیا ہے۔

چیئرمین پی سی بی نے کہا کہ ہم نے پہلے ہی ایکشن لے کر ان کو معطل کر دیا تھا، ناصر جمشید کے خلاف شواہد آئیں گے تو مزید کارروائی کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ کرکٹ میں مجرمانہ کارروائی پر لندن میں کارروائی ہوتی ہے، ناصر جمشید لندن میں رہتے ہیں، لگتا ہے یوسف بھی وہیں رہتے ہیں، انہوں نے کہا کہ برطانوی نیشنل کرائم ایجنسی نے آزادانہ طور پرکارروائی کی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top