The news is by your side.

Advertisement

سری لنکا نے کرونا سے جاں بحق مسلمانوں کی تدفین کی اجازت دے دی، وزیر اعظم کا خیر مقدم

کولمبو: سری لنکا میں کرونا انفیکشن سے جاں بحق ہونے والے مسلمانوں کی میتوں کی تدفین کی اجازت دے دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق سری لنکن وزیر اعظم مہندا راجا پکسا نے کرونا سے متاثر ہو کر انتقال کرنے والے مسلمانوں کی تدفین کی اجازت دے دی۔

ادھر وزیر اعظم عمران خان نے سری لنکا میں مسلمانوں کو دفن کرنے کی اجازت کا خیر مقدم کیا ہے، انھوں نے ٹوئٹر پر پیغام دیتے ہوئے لکھا کہ ہم سری لنکن پارلیمنٹ کی یقین دہانی کا خیر مقدم کرتے ہیں۔

وزیر اعظم نے ٹوئٹ میں لکھا ’ہم آج سری لنکن پارلیمان میں وزیر اعظم مہندا راجا پاکسا کی اس یقین دہانی، کہ مسلمانوں کو کرونا سے انتقال کر جانے والوں کی تدفین کی اجازت ہوگی، کا خیر مقدم کرتے ہیں۔‘

واضح رہے کہ  اسلامی ممالک کی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے علاوہ دنیا بھر سے مختلف مکاتب فکر نے نے سری لنکا میں کرونا سے جاں بحق مسلمانوں کی میتیں جلانے پر تشویش کا اظہار کیا تھا۔

سری لنکا : مسلمان میتوں کو زبردستی جلانے کا عمل جاری، 20 دن کا بچہ بھی شامل

دنیا بھر کے مسلمانوں کے احتجاج  کے بعد گزشتہ ماہ ماہرین کی ایک کمیٹی نے وزارت صحت کو تدفین سے متعلق تجاویز دی تھیں، اس 11 رکنی کمیٹی نے حفاظتی احتیاطی تدابیر پر عمل پیرا ہو کر تدفین کی سفارش کی تھی۔

گزشتہ روز برطانیہ میں ان مسلم خاندانوں نے جن کے پیاروں کی میتوں کو سری لنکا میں جلایا گیا تھا، اقوام متحدہ میں شکایت درج کی ہے، جس میں سری لنکا کی متنازعہ پالیسی کو ’غیر منصفانہ اور امتیازی‘ قرار دیا گیا، اور مطالبہ کیا گیا کہ اس پالیسی کو فوری طور پر معطل کیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں