The news is by your side.

Advertisement

سری لنکا نے روسی طیارہ قبضے میں لے لیا

کولمبو: سری لنکا نے روسی طیارہ قبضے میں لے لیا اور ماسکو واپس بھیجنے سے انکار کردیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ایئرپورٹ حکام نے بتایا کہ سری لنکا میں روس سے چلنے والا ہوائی جہاز ماسکو سے واپس آتے ہی قبضے میں لے لیا گیا جس میں 200 کے قریب مسافر سوار تھے۔

دارالحکومت کے شمال میں واقع بندرانائیکے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے ایک اہلکار نے بتایا کہ ’ایروفلوٹ ایئربس اے 330 – جو پہلے دن میں ماسکو سے آیا تھا جسے کولمبو کمرشل کورٹ کے حکم کے بعد واپس جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔‘

روس کے فلیگ شپ کیریئر نے مارچ میں ماسکو کے یوکرین پر حملے پر سخت مغربی پابندیوں کے بعد تمام بین الاقوامی پروازیں معطل کر دی تھیں لیکن اپریل میں کولمبو کے لیے دوبارہ آپریشن شروع کر دیا تھا۔

روس کی سول ایوی ایشن باڈی نے تجویز کی تھی کہ غیر ممالک میں رجسٹرڈ کرائے کے طیارے چلانے والی روسی ایئرلائنز پابندیوں کے سلسلے میں طیاروں کو ضبط کرنے سے بچنے کے لیے بیرون ملک پروازیں بند کر دیں۔

یہ واضح نہیں ہوسکا کہ پرواز ایس یو 289 کو روکا جانا ان پابندیوں کی وجہ سے ہے یا نہیں۔

ایئر ٹریفک کنٹرول نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ’ہمیں وجہ کا علم نہیں ہے لیکن ہم نے سنا ہے کہ اس کا تعلق تجارتی تنازع سے ہے۔

تاہم کولمبو ایروفلوٹ کی جانب سے اس پر فی الحال کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں